شوگرملز کاشتکاروں کو بینکوں کے ذریعے ادائیگی، ترمیمی ایکٹ منظور

136

گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے شوگرفیکٹر یز ایکٹ کے ترامیمی مسودہ قانون کی منظوری دیدی۔

تفصیلات کے مطابق شوگر فیکٹریز تر امیمی ایکٹ پنجاب 1950 میں کاشتکاروں کی سہولتوں کیلئے ا ہم تبدیلیاں کی گئی ہیں۔ نئے ایکٹ 2021 میں شوگر ملز کو کسانوں کو ادائیگی کے حوالے سے بھی نئی شق شامل ہے۔

ترامیم کے بعد شوگرملزگنے کے کاشتکاروں کو بینکوں کے ذریعے ادائیگی کر نے کی پابندہوں گی جب کہ ترامیمی ایکٹ کے تحت پنجاب میں شوگرملز حکومت کی مقررہ تاریخ پر ہی گنے کی کرشنگ کر سکیں گی۔

مقررہ وقت پرگنے کے کاشتکاروں کو ادائیگی نہ کرنےوالے شوگر ملز کے خلاف ایکشن بھی لیا جائے گا۔ نئے ایکٹ کے تحت گنے کے کاشتکاروں کو ادائیگی نہ کرنےوالی شوگرملزسے کین کمشنر ریکوری کروائیں گے۔

گورنرپنجاب کاکہنا ہے کہ شوگر ملز کو پابند کر دیا ہے وہ 45 دن کے اندر کاشتکاروں کو مکمل ادائیگی کریں گی ، گنے کے کاشتکاروں کو شوگرملز سے پیسے لینے کیلئے اب دھکے نہیں کھانے پڑیں گے وزیر اعظم عمران خان وعدے کے مطابق کسانوں کیساتھ کھڑے ہیں۔