شہباز گل کی پریس کانفرنس سے چینلز کا ایئر ٹائم خراب ہوا ہے ، ناصر حسین شاہ

133

کراچی: وزیر اطلاعات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے شہباز گِل پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں حیران ہوں شہباز گل جیسے فارغ لوگ گورنر ہاؤس میں بیٹھ کر سندھ حکومت کو گالیاں دیتے ہیں ، صحافیوں نے شہباز گل کو مسترد کیا ہے، تب ہی سندھ آنا شروع کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق  سید ناصر حسین شاہ نے وفاقی معاون خصوصی شہباز گل کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ گورنر صاحب خود تو نانگا پربت گھوم رہے ہیں اور گورنر ہاؤس زہریلے ناگنوں کے حوالے کر گئے ہیں، وفاقی وزراء سندھ میں زہر آلود زبان استعمال کر رہے ہیں،  تو یہ کیوں پیچھے رہیں۔

سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ آج شہباز گل نے کون سی کام کی بات کی ہے سوائے زبان درازی کے، شہباز گل کی پریس کانفرنس سے کو چینلز کا ایئر ٹائم خراب ہوا ہے وفاق اس کی ادائیگی کرے۔

انہوں نے مزید کہا کہ شہباز گِل کی بداخلاقی کی وجہ سے جہاں بھی انہوں نے بات کی وہاں ان کا بائیکاٹ ہوا، امریکا، پنجاب اور اسلام آباد کے صحافیوں نے شہباز گل کو مسترد کیا ہے، تب ہی سندھ آنا شروع کیا ہے۔

سید ناصر حسین شاہ کا سندھ حکومت اور وفاقی حکومت کی کارکردگی سے متعلق بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ سندھ حکومت زیادہ تر اپنے ٹیکس اہداف حاصل کر چکی ہے، وفاقی حکومت نے ٹیکس کی وصولیوں میں ناکامی کی صورت میں تمام صوبوں کو مالی نقصان پہچایا ہے،  پی ٹی آئی حکومت نے کوئی شعبہ چاہے وہ زراعت ہو صنعت ہو تباہ کر دیئے ہیں۔

سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ  پیپلز پارٹی حکومت کی یہ کارکردگی ہے کہ صوبے کے عوام نے ضمنی انتخابات میں کامیاب کیا،  پی ٹی آئی کی یہ کارکردگی ہے کہ عوام نے ان کو ان کی اپنی نشستوں سے ہرا کر مسترد کر دیا۔

اُن کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی نے عوام کی خدمت کے بجائے مخالفین کو نشانہ بنانے میں وقت ضائع کیا،  پی ٹی آئی واحد حکومت ہے جس کے اندر سے ٹوٹ پھوٹ کی آوازیں آ رہی ہیں،  جیسے ہی الیکشن قریب آئیں گے شہباز گل جیسے لوگ ملک چھوڑ کر باگ جائیں گے۔

سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ  چیئرمین بلاول بھٹو کے خلاف شہباز گل بات کرکے اپنا سیاسی قد بڑھانے کی کوشش کر رہے ہیں، سندھ میں انتشار پھلانے کے لیے خان صاحب نے آپ کی ڈیوٹی لگائی ہے،  سندھ حکومت کی ناکامی کی بات کرکے شہباز گل وفاق کی نااہلی اور ناکامی کو نہیں چھپا سکتے۔

سید ناصر حسین شاہ کا کہنا تھا کہ شہباز  گل صاحب ٹیکسز کے ماہر ہیں تو جا کر وفاقی حکومت کو سبق پڑھائیں جو مکمل طور پر ناکام ہے، حکومت سندھ نے ہر شعبے کے لیے بہتر انداز میں فنڈز مختص کیے ہیں اور  سندھ حکومت کا کام وزیراعلیٰ سندھ کی سربراہی میں کرنا جانتی ہے اور کر رہی ہے۔