گوادر جیونی ایکٹیوسٹ فورم کے زیر اہتمام جیونی کو پانی دو ریلی

99

گوادر (نمائندہ جسارت)جیونی ایکٹیوسٹ فورم کے زیر اہتمام جیونی پانی دو یلی کا آغاز ناخدا رسول بخش چوک سے ہوا اور جیونی مین بازار سے ہوتے ہوئے جامع مسجد کے قریب احتجاجی مظاہرے سے بی این پی عوامی کے مرکزی ہیومن رائٹس سیکرٹری سعید فیض ایڈووکیٹ، نیشنل پارٹی کے رہنما سابق چیئرمین منظور احمد، جمعیت علما اسلام کے رہنما و جیونی کے معروف عالم دین مولانا محمد عارف ، جماعت اسلامی کے ضلعی رہنما و جیونی ایکٹیوسٹ فورم کے کنوینر امام دلوش، نیشنل پارٹی جیونی کے آرگنائزر و ایکٹیوسٹ فورم کے ڈپٹی کنوینر ہارون ساحر، ماہی گیر بزرگ رہنما ناخدا غلام نبی نے مظاہرے کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جیونی پانی بحران عرصے سے جاری ہے اور روز بر روز شدت اختیار کرتا جار ہا ہے ڈپٹی کمشنر گوادر نے احتجاجی خواتین سے جو وعدے کیے وہ بھی وقتی دلاسہ ثابت ہوئے، اب دوسرا المیہ یہی ہے کہ آنکاڑہ ڈیم کا پانی ختم ہونے کو ہے اور اس صورتحال میں پانی کے متبادل ذرائع کیلیے انتظامیہ اور محکمہ پبلک ہیلتھ نے حسب سابق قریبی بورنگ سے ہمیں زہریلا پانی دینے کا منصوبہ بنا رہے ہیں جو ہمیں کسی بھی صورت قبول نہیں کہ اس پانی سے پہلے کی طرح بیماریاں پھیلنے کا خدشہ ہے۔ مقررین نے مزید خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج جو 23 برسوں سے گوادر میں نمائندگی کر رہے ہیں وہ مسائل کے حل میں مکمل ناکام ہو چکے ہیں انہی کے دور میں یہاں کے غریب لوگوں نے اپنی جانوں تک کا نذرانہ پیش کیا لیکن عوام اب بھی پیاسی ہے ہمارے ایم پی اے اور صوبائی حکومت کروڑوں روپے کے فنڈز غیر ضروری اسکیموں پر خرچ کر رہے ہیں لیکن جیونی اسٹوریج ٹنکی اور مشینری کیلیے ان کے پاس فنڈز نہیں جو انتہائی شرمناک بات ہے اور نہ ہی بحرانی حالات میں متبادل ذرائع پر توجہ دی جارہی ہیجو کہ انتہائی شرم کی بات ہے کہ اب دوبارہ زہریلا پانی فراہم کرنے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ ہر وقت منتخب نمائندوں نے عوام کو دھوکا دیا اب وقت آ گیا ہے کہ جیونی کے بے بس عوام ان دھوکے باز اور فراڈ نمائندوں کی دھوکے بازی میں نہ آئے یہ اپنی نمائندگی کا حق ادا کرنے میں مکمل ناکام ثابت ہوئے ہیں۔احتجاجی مظاہرے میں مقررین نے مطالبہ کیا کہ بحرانی کیفیت میں فوری طور پر پینے کے قابل پانی فراہم کیا جائے، قریبی بورنگ کا زہریلا پانی قابل قبول نہیں ہوگا۔ جیونی کو وہ پانی فراہم کیا جائے جو گوادر کو دیا جائی گا،متبادل کے طور پر دشت میں موجودہ بورنگ سے جیونی کو پانی سپلائی کیا جائے۔ احتجاجی مظاہرے میں فیصلہ کیا گیا کہ اگر درج بالا مطالبات پر عملدرآمد کرکے فوری طور پر جیونی پانی کا مسئلہ حل نہیں کیا گیا تو عوامی جرگہ منعقد کرکے آگے کا لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔ احتجاجی مظاہرے میں اسٹیج سیکرٹری کے فرائض علی صالح نے انجام دیے۔ آخر میں جیونی ایکٹیوسٹ فورم کو عین وقت کی ضرورت قرار دیتے ہوئے تمام پارٹیوں اور ہر طبقے نے یقین دہانی کرائی کہ ہم آئندہ بھی جیونی ایکٹیوسٹ فورم کے شانہ بشانہ ہوکر مکمل سپورٹ فراہم کریں گے۔