مزدور کی کم از کم اجرت 30 ہزار روپے مقرر کی جائے‘ ذکر اللہ مجاہد

71

لاہور (نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی لاہور میاں ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ ریل کا پہیہ مزدوروں کی دن رات کی محنت اور خون پیسنے سے چلتا ہے۔ مزدور کی کم از کم اجرت 30ہزار مقرر کی جائے۔ موجودہ مہنگائی کے دور میں مزدور ملازمین کے لیے گھر چلانا جوئےشیر لانے کے مترادف ہے۔ ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے ریلوے پریم یونین کے سینئر رہنما چودھری محمد اقبال کی جانب سے دیے گئے عشائیے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ عشائیہ تقریب میں ریلوے پریم یونین کے مرکزی چیئرمین ضیا الدین انصاری، ریلوے پریم یونین ورکشاپ پاکستان کے صدر چودھری محمودالاحد، صدر اوپن لائن سی بی اے شیخ محمد انور، ڈپٹی سیکرٹری جماعت اسلامی لاہور احمد سلمان بلوچ، معروف آرٹسٹ فاروق بھٹی، حافظ محمود احمد، محمد یونس ایڈووکیٹ، فیاض شہزاد، چودھری ظفر، ناصر خان، عالمگیر، طارق بن زاہد، صفدر چودھری، محمد ارشد، چودھری طارق نیاز، فرحان شوکت ہنجرا، ملک جمیل، حاجی عبدالعزیز مدنی، عدنان شکور، حافظ عبدالواحد اور دیگر نے شرکت کی۔ میاں ذکر اللہ مجاہد نے کہا کہ حکومت نے عوام دشمن بجٹ پیش کیا جس سے سرکاری ملازمین سمیت عام آدمی کی بھی مشکلات کم ہونے کے بجائے مزید بڑھ گئی ہیں، جس کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔ اس موقع پر امیر جماعت اسلامی لاہور میاں ذکر اللہ مجاہد نے وفاقی بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں برائے نام اضافہ والے بجٹ کے خلاف ریلوے پریم یونین کی ملک گیر احتجاجی کال کی حمایت کا بھی اعلان کیا۔