اسرائیلی مظالم کیخلاف جماعت اسلامی سراپا احتجاج ،ہزاروں افراد کا فلسطینیوں سے اظہا ر یکجہتی

250
لاہور: جماعت اسلامی پاکستان کے جنر ل سیکرٹری امیر العظیم اور نائب امیر لیاقت بلوچ فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کیلیے نکالی گئی ریلی سے خطاب کررہے ہیں

لاہور(نمائندہ جسارت) فلسطینی عوام سے اظہار یکجہتی کے لیے جماعت اسلامی لاہور کے زیراہتمام پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین نے اسرائیل اور اس کے حمایتیوں کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ مظاہرین نے فلسطین کا پرچم اور اسرائیل کے خلاف پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر تحریر تھا کہ القدس امت مسلمہ کو پکار رہاہے۔ مظاہرین سے سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان امیرالعظیم ، نائب امیرجماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ ، جماعت اسلامی لاہور کے نائب امیر وقار ندیم وڑائچ ، قیم جماعت اسلامی لاہور انجینئر اخلاق احمد ، چودھری محمودالاحد ، ضیا الدین قصور ی ایڈووکیٹ ، احمد سلمان بلوچ نے بھی خطاب کیا۔ امیر العظیم نے اپنے خطاب میں کہاکہ رب کی بندگی کے لیے غاصب اسرائیلی فلسطینی مسلمانوں کو اجازت نہیں دے رہے۔ کشمیر ، اراکان ، افغان ، ہمارے دشمنوں کو نہ ہمارے نظریات قبول ہیں اور نہ ہی عمارتیں قبول ہیں۔ اسرائیل عربوں کے سمندر میں ایک چھوٹا سا جزیرہ ہے اس کا یہ ظالمانہ کردار بے حس حکمرانوں اور بادشاہوں کی وجہ سے ہے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس بلایا جائے اور اسرائیل کو اس ظلم سے روکا جائے۔ اقوام متحدہ اپنی قرار دادوں پر عمل کرے۔ یہ صدی کی ڈیل دھوکا فریب ہے۔ ٹرمپ نے امریکیوں سے دھوکا کیا ہم جوبائیڈن سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ تل ابیب اور یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے فیصلے کو واپس لیں۔ مسلم حکمران جنہوں نے اسرائیل کو تسلیم کیاہے وہ اپنا فیصلہ واپس لیں۔ او آئی سی کا سربراہی اجلاس بلا کر فلسطینیوں کے ساتھ غیر متزلزل حمایت اور ان کی پشت پناہی کا اعلان کیا جائے۔ وزیراعظم عمران خان سے کہنا چاہتا ہوں کہ آپ تقریروں ، پریس کانفرنسوں میں مظلوم مسلمانوں کی باتیں کرتے ہیں لیکن یہ باتیں کرنے کا وقت نہیں ، عمل کرنے کاوقت ہے۔ پاکستان کی ضرورت ہے کہ آج ہم کشمیر ، فلسطین ،افغانستان پر مسلمہ دوٹوک قومی حکمت عملی اپنائیں۔ فلسطینیوں نے اسرائیل کو جواب دیاہے۔ پوری امت مسلمہ کے حکمران بے حس ہو کر بیٹھے ہیں۔ ہم فلسطینیوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔ امت مسلمہ کے بے ضمیر حکمرانوں ، غاصب امریکا ،بھارت کے خلاف ، غیرت مند مسلمان ان شاء اللہ شہادت اور جہاد کے پرچم بلند رکھیں گے۔ نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہاکہ آج فلسطینیوں نے ایک نئے انداز میں انتفاضا اور جہاد کا آغاز کردیاہے۔ اسرائیل ایک ناجائز ریاست ہے۔ فلسطین فلسطینیوں کا ہے۔ قبلہ اول دنیا بھر کے مسلمانوں کے لیے عزت و تقدس کا مرکز ہے۔ یہ وہ مقام ہے جہاں خاتم الانبیا حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے تمام انبیاکرامؑ کی امامت فرمائی۔ آج قبلہ اول ، مسجد اقصیٰ صہیونیت کے قبضے میں ہے۔ ٹرمپ نے صدی کی ڈیل کے نام پر دھوکا اور فریب کا نظام بچھایا لیکن فلسطینیوں نے اس کو کسی قیمت پر قبول نہیں کیا اب فلسطینی مسجد اقصیٰ میں ، لیکن مجاہد صفت فلسطینی اسرائیل کے منصوبے کو ناکام بناتے ہوئے جمعے کی نماز ، قرآن کی تلاوت ،قیام اللیل کے ذریعے اسرائیلی فوج کے سامنے ڈٹ گئے اور اللہ کے ساتھ رشتے کی مضبوطی کا اعلان کرتے رہے۔ آج غزہ دنیا کی سب سے بڑی اوپن جیل ہے وہاں بھی اسرائیل نے حملہ اور بمباری کر کے اسے مسمار کرنے کی مہم شروع کی ہے لیکن حماس نے اسرائیل پر اپنے ہاتھوں سے تیار کردہ میزائل داغے ہیں جس سے اسرائیل میں کہرام مچاہواہے۔ آج دنیا میں ڈیڑھ ارب مسلمان ہیں۔ مسلمان حکمرانوں کا المیہ ہے کہ یہ بے بسی کی تصویر بنے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اگر مسلم ممالک اکٹھے ہو جائیں تو اسرائیل ریزہ ریزہ ہو جائے۔ ہم فلسطینیوں کے ساتھ ہیں۔ ہمارا موقف آج بھی قائداعظم ؒ ، علامہ اقبال ؒ اور مولانامودودی ؒ کی طرح فلسطینیوں کی حمایت میں ہے۔