روزے انسان میں ثابت قدمی اورا طاعت کی خصوصیات پیدا کرتے ہیں

19

فیصل آباد(وقائع نگارخصوصی)اسلامی جمعیت طلبہ کے ناظم حافظ امان اللہ صابر نے کہا ہے کہ اسلامی جمعیت طلبہ زیراہتمام رمضان المبارک میں اپنے کارکنان کی ذہنی و فکری تربیت کے لیے شب داری،درس قرآن و حدیث کی محفلیں منعقد کی جاتی ہے۔رمضان کی اس بابرکت ساعتوں میں زیادہ سے زیادہ تلاوت قرآن،نوافل و دیگر عبادات کا اہتمام کیا جائے اور اپنے رب کے ساتھ تعلق کو مضبوط بنایا جائے یہی رمضا ن کا پیغام ہے۔انہوںنے کہا کہ انسان کی اصل زندگی موت کے بعد شروع ہوتی ہے،دنیا کی زندگی آزمائش کی مہلت ہے۔یہی وجہ ہے نبی کریمؐ کی زندگی اور قرآن میں میں جابجا موت کو یاد کرنے کا ذکر ملتا ہے۔اس لیے ازلی زندگی کی تیاری کی ضرورت ہے۔اور اس تیاری کی دو صورتیں ہو سکتی ہے ایک موت کوکثرت سے یاد رکھا جائے اور دوسراہمیشہ کی زندگی کے لیے دنیامیں نیک اعمال کرنا۔ رمضان کے روزے انسان میں ثابت قدمی اورا طاعت کی خصوصیات پیدا کرتے ہیں اور اس مبارک ماہ کی راتیں اپنے اعمال کی جانچ کا بہترین موقع فراہم کرتی ہیں۔ رمضان المبارک اپنے ساتھ رحمت،مغفرت اور جہنم سے نجات کا زبردست پیکیج لے کر آتا ہے۔اور اللہ تعالیٰ انسان کی نیتوں کے مطابق اس پیکیج کوستر سے سات سو فیصد تک بڑھا دیتا ہے نبی مہربان ﷺے نہ صرف دین کی دعوت لوگوں کو دی بلکہ اسکا بہترین عملی نمونہ پیش کیا اور رہتی دنیا کے لیے انسانی اخلاق و کردار کی اعلٰی مثال قائم کی یہی اسوہ حسنہ ہمارے لیے مشعل راہ ہے۔ اقامت دین کی جدو جہد کے داعیوں کو خود کو نبی اکرم ﷺکے پیش کردہ اسوہ حسنہ کے سانچے میں ڈھالناہے اس پر خار راستے پر چلنے والوں کو ہر وقت متحرک رہناہے صبر برداشت کا پیکر بننا ہے بہترین اخلاق و کردار پیش کرنا ہے۔اسلامی جمعیت طلبہ تعلیمی اداروں میںطلبہ کو اسلام کا سپاہی بنانے کی جدوجہد میں مصروف عمل ہے ضروری ہے کہ اسلامی جمعیت طلبہ سے وابستہ ہرفردفریضہ اقامت دین کی ادائیگی کے لیے کمر بستہ ہو قرآن سے وابستہ رہے خود بھی مستعد رہے اور لوگوں کو بیدار رکھے کہ تاپاکیزہ اسلامی معاشرہ اور اسلامی نظام قائم کیا جاسکے۔