حیدرآباد ،ٹریژری ملازمین تنخواہوں سے محروم

14

حیدرآباد(اسٹاف رپورٹر) حیدرآباد کے ٹریژری آفس میں نااہل عملے نے غریب ملازمین کی زندگی اجیرن کردی ہے اگر نااہل ملازمین کو تبدیل کرکے محنتی اور ایماندار عملے کو واپس نہ لایا گیا تو احتجاج پر مجبور ہوںگے۔ ان خیالات کا اظہار پبلک ہیلتھ انجینئرنگ اسٹاف ایسوسی ایشن سندھ کے صدر شکیل احمد شیخ نے پی ایچ ای ایپکا یونٹ کے صدر افضال خان کے ہمراہ ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس آفیسر حیدرآباد سے ملاقات کے دوران کیا۔ انہوںنے کہاکہ ورک چارج ملازمین کی تنخواہوں میں تاخیری حربے اختیار کرنے پر اپنی تشویش سے آگاہ کرتے ہوئے کہاکہ غریب ورک چارج ملازمین شدید مہنگائی اور رمضان المبارک کے آخری عشرے میں جبکہ عید سر پر اپنی تنخواہوں سے محروم ہیں ٹریژری افسران کی جانب سے عدم دلچسپی کا مظاہرہ کیا جارہاہے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ آفیسر وینڈر بنانے کے لیے پندرہ روز سے دلاسے دے رہے ہیں اس سے پہلے اسٹاف وینڈر خود بنادیتے تھے جبکہ یہ کوئی غیر قانونی اقدام بھی نہیں لیکن موجودہ افسر اقبال شیخ اپنے ماتحت اسٹاف پر اعتماد کرنے کو تیار نہیں ہیں ۔شکیل احمد شیخ نے کہاکہ غریب ورک چارج ملازمین بڑی مشکلات کا شکار ہیں لیکن ٹریژری حیدرآباد میں اس کا کوئی نوٹس نہیں لیاجارہاہے ۔انہوںنے کہاکہ اہل اسٹاف جو کہ ا نتہائی محنت سے کام کررہے تھے انہیں دور دراز ٹرانسفر کردیا گیا ہے جبکہ ان کی جگہ نااہل اسٹاف تعینات کردیا ہے وہ عدم دلچپسی سے کام کررہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ فوری طو رپر کام کرنے والے محنتی غریب پرور افسران کا تقرر کیاجائے سابقہ اسٹاف کو واپس لایاجائے اور تاخیری حربے ختم کیے بصورت دیگر سخت احتجاج پر مجبو ہوں گے۔