ہائی بلڈ پریشر سے متعلق جاننے کی بنیادی باتیں

394

ہائی بلڈ پریشر کے عارضے کو نظرانداز کرنا آسان ہے جب تک کہ صحت سے متعلق پیچیدگیاں واضح طور پر سامنے نہ آئیں۔

بدقسمتی سے بہت سارے لوگوں کو ہائی بلڈ پریشر کے اثرات کا ادراک نہیں ہوتا جب تک کہ وہ دل کی بیماری میں مبتلا نہ ہوں گردے کو نقصان نہ ہو یا فالج نہ ہو۔

ہائی بلڈ پریشر کا سرکاری معیار حال ہی میں تبدیل ہوا ہے جس کی حد 130/80 ملی میٹر ایچ جی تک رکھی گئی ہے۔ امریکن ہارٹ ایسوسی ایشن کے مطابق اب 100 ملین سے زائد امریکیوں کو ہائی بلڈ پریشر ہے۔

پہلے سے کہیں زیادہ مریضوں کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے کہ وہ اپنی مرض کو قبل از وقت معلوم کریں اور خطرات کو کم کرنے کے لئے عملی اقدامات کریں۔ اگر آپ ہائی بلڈ پریشر کی اول وقت میں تشخیص کرنے والے لوگوں میں سے ہیں تو آپ اس کو سنبھالنے ، اس کی پیچیدگیوں سے بچنے اور اپنے بلڈ پریشر کو معمول پر لانے کیلئے کئی حکمت عملی اپنا سکتے ہیں۔

ہائی بلڈ پریشر کو بھی کسی وجہ سے “خاموش قاتل” کہا جاتا ہے۔ جب تک آپ ہائی بلڈ پریشر کی وجہ سے کسی میڈیکل ایمرجنسی کا سامنا نہیں کرتے، آپ کو انتباہی علامات کا پتہ نہیں چل پاتا۔ زیادہ تر لوگوں کے لیے غیر علاج شدہ دائمی ہائی بلڈ پریشر آہستہ آہستہ لیکن مستقل طور پر وقت کے ساتھ ساتھ ساتھ سنگین خطرہ بنتا جائے گا۔

مزید علامات میں سانس کی قلت ، ناک میں درد اور شدید اضطراب ، سینے یا کمر میں درد ، کمزوری ، بے حسی یا بولنے میں دشواری جیسی علامات شامل ہیں۔