اسرائیل میں عیسائی مذہبی تقریب پر پابندی، اُردن کی شدید مذمت

240

اردن نے اسرائیلی پولیس کی جانب سے مقبوضہ شہر یروشلم میں واقع چرچ آف ہولی سیپلچر میں مذہبی تہوار مقدس آگ منانے کیلئے عیسائیوں کی شرکت کو روکنے پر شدید مذمت کی ہے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق اردن کی وزارت خارجہ کے ترجمان الفیاض نے کہا کہ اردن اسرائیلی پولیس کی جانب سے عیسائیوں کو مذہبی تقریب میں شرکت سے روکنے پر اسرائیل کی شدید مذمت کرتا ہے۔

الفیاض نے مقبوضہ شہر مشرقی یروشلم میں اسرائیلی حکام سے مطالبہ کیا کہ وہ شہر میں تاریخی اور قانون کا احترام کریں اور بین الاقوامی قانون کے مطابق مذہبی رسومات کے رواج میں رکاوٹیں نہ ڈالیں۔

واضح رہے کہ اسرائیل نے گزشتہ روز یروشلم کے چرچ آف دی ہولی سیپلچر میں منعقدہ ‘مقدس آگ’ کی مذہبی تقریب میں عیسائیوں کو شرکت سے روکا تھا۔

عیسائی مذہب میں مقدس آگ کی تقریب یسوع مسیحؑ کے جی اٹھنے کی علامت سمجھی جاتی ہے۔

واقعے کے عینی شاہدین نے بتایا کہ اسرائیلی پولیس نے رسائی کو روکنے کے لئے رکاوٹیں کھڑی کیں۔ صرف چند پادری چرچ جانے کے قابل تھے۔