کرپٹ عناصر رشوت لے کر مجرموں کو تحفظ دے رہے ہیں

60

لاہور (نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی لاہور میاں ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ آئین اور قانون کی بالادستی سے ہی ملک و قوم کی ترقی وابستہ ہے۔قانون کی بالادستی اس وقت تک قائم نہیں ہو سکتی جب تک اسے کسی بھی ذات اور تعصب کے بغیر برابری کی بنیاد پر لاگو نہیں کیا جاتا۔ عوام کی محرومیوں اور مایوسیوں کا خاتمہ اور جان و مال کا تحفظ قرآن و سنت کے نظام میں ہے۔ ان خیالات کا اظہار ا نہوں نے دفتر جماعت اسلامی لاہو رمیں آنے والے مختلف سیاسی و سماجی وفود سے گفتگو کے دوران اپنے بیان میں کیا۔ میاں ذکر اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ جب تک کوئی قوم آئین کی بالا دستی اور قانون کی حکمرانی کا عملی ثبوت پیش نہیں کرتی وہ قوم زندگی کے کسی بھی شعبے میں پیش قدمی نہیں کرسکتی۔ اس وقت اسلامیان پاکستان میں حکومتیں اور سرکاری عمال رشوت، کرپشن کی لت میں اس حد تک ملوث ہو چکے ہیں کہ جرائم کو پنپنے کا موقع مل رہا ہے۔ کرپٹ عناصر رشوت لے کر مجرموں کو تحفظ دے رہے ہیں جس سے ناانصافی اور حق تلفی بڑھ رہی ہے۔ یہ تباہی اور بربادی کی علامتیں ہیں۔ ایسے منفی رویوں سے معاشرے تخریبی عمل اور ٹوٹ پھوٹ سے دو چار ہو جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب اللہ اور اس کے رسول ﷺ کی ناراضگی سے بچیں۔ ایک دوسرے کی جان و مال و عزت اور حقوق و فرائض کا خیال رکھیں۔ انسانی حقوق کی پاسداری میں ہی اللہ کی خوشنودی اور اس کے انعامات ہیں۔میاں ذکر اللہ مجاہد نے کہا کہ ملک میں تین سالوں میں احتساب کے نام پر سیاسی کھیل کھیلا جارہا ہے جس کا ملک و قوم کو کوئی فائدہ نہیں پہنچا۔تحریک انصاف نے اقتدار سے قبل احتساب کا نعرہ لگایا جس پر عمل درآمد کروانے میں وہ مکمل ناکام ہوچکی ہے۔ سیاسی انتقام کیلیے احتساب کے نام پر اداروں کو استعمال کرنے کے انکشفا ت انتہائی قابل مذمت ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ہر محاذ پر مکمل ناکام ہوچکی ہے اور اس کی کارکردگی نے پوری پاکستانی قوم کو مایوسی کے اندھیروں میں ڈبو دیا ہے۔ عوام کے مسائل کا حل قرآن وسنت کے نظام سے وابستہ ہے۔ قوم سے اپیل کرتے ہیں وہ جماعت اسلامی کی باکردار اور دیانتدار قیادت کا ساتھ دیں تاکہ ملک کو حقیقی معنوں میں مدینہ کی ریاست بنایا جا سکے۔