ہمیں امریکی فوج کی ضرورت نہیں، عراق

816

عراقی فوج نے کہا کہ عراق کے شانہ بشانہ لڑنے کیلئے عراق کو کسی امریکا اور غیر ملکی فوج کی ضرورت نہیں۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق عراقی فوج کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل یحیی رسول نے ایک بیان دیا جس میں میں انہوں نے کہ عراق سے غیر ملکی فوج کی واپسی کا فیصلہ بغداد اور واشنگٹن کے مابین تکنیکی کمیٹیوں کے ذریعے کیا جائے گا۔

دوسری جانب جمعہ کے روز امریکی سینٹکام کے ایک اعلیٰ جنرل نے کہا تھا کہ مستقبل قریب میں عراق سے مکمل امریکی انخلا کا کوئی منصوبہ نہیں ہے۔

یحییٰ رسول نے کہا کہ عراقی افواج کے شانہ بشانہ لڑنے کے لئے عراق کو کسی امریکی یا غیر ملکی فوجی کی ضرورت نہیں ہے اور نہ دیگر جنگجوؤں کی۔

انہوں نے مزید کہا کہ غیر ملکی افواج کے انخلا کے لئے شیڈولنگ عمل میں ہے جس کا فیصلہ “بغداد اور واشنگٹن کے مابین اسٹریٹجک مکالمے کے تحت کیا جائے گا۔

یحییٰ رسول نے یہ کہتے ہوئے اختتام کیا کہ عراق نے ملک اور عوام کا دفاع کرنے کی صلاحیت رکھنے والی عراقی افواج دشمنوں سے لڑنے کیلئے اکیلے ہی کافی ہے۔

واضح چہتے کہ عراقی لیٖرشپ نے 5 جنوری 2020 کو پارلیمانی فیصلے کے تحت ملک سے امریکی فوجیوں کے انخلا کا مطالبہ کیا تھا۔