گھریلو ساختہ کوروناویکسین، سائنسدانوں کا نیا منصوبہ

270

دنیا بھر کے لاکھوں لوگوں کے لئے جن کیلئے کوویڈ 19 ویکسین حاصل کرنا مشکل ہے ، بوسٹن، امریکا کے سائنسدانوں کے ایک گروپ نے ممکنہ حل پیش کیا ہے۔ تاہم یہ ابھی تک پایہ تکمیل کو نہیں پہنچا تاہم مہلک وائرس سے بچنے کی امید بڑھاتا ہے۔

اس سائنسدان کے گروپ کو ریپڈ ڈپولیمنٹ ویکسین کولیبوریٹیو یا آر ڈی وی اے سی کہا جاتا ہے اور ان کی ویکسین اتنی آسان ہے کہ اس کے چیف سائنسدان پریسٹن ایسٹپ نے کہا کہ ہم اسے اپنے کچن میں بھی بنا سکتے ہیں۔

یہ بات بھی ذہن نشیں رہنی چاہیے کہ اس ویکسین کا موثر ہونا ابھی ثابت نہیں ہے۔ یہ موڈرننا انکارپوریٹڈ ، فائزر انکارپوریشن ، آسٹرا زینیکا پی ایل سی اور جانسن اینڈ جانسن کی طرح وسیع اور مہنگے کلینیکل آزمائشوں سے بھی نہیں گزری ہے۔ تاہم اس ویکسین کے لئے اہم ٹیسٹنگ اتھارٹی خود RADVaC کے سائنسدان اور ہارورڈ میڈیکل اسکول کے جارج چرچ جیسے دوسرے ماہرین ہیں جو یقین رکھتے ہیں کہ یہ پروجیکٹ کوروناوائرس کو ختم کرنے کی اہلیت رکھتا ہے۔

اس ویکسین کی تیاری پر کم قیمت اور کم نہ ہونے پر ٹیکنالوجی کا استعمال کیا گیا ہے۔ اس کا ایک شاٹ کم سے کم ایک ڈالر میں بنایا جاسکتا ہے جسے تیار کرنے کیلئے 1 گھنٹے سے بھی کم کا وقت لگتا ہے۔