عدالتی احکامات کی خلاف ورزی، سمیرا حسین کو محکمہ چارجڈ پارکنگ کے ڈائریکٹرکاایڈیشنل چارج دے دیا گیا

118

کراچی(رپورٹ:منیر عقیل انصاری) ایڈمنسٹریٹر بلدیہ عظمیٰ کراچی لیئق احمد نے عدالتی احکامات کا مذاق بنا کر رکھ دیا۔ عدالتی احکامات کی کھلی خلاف ورزی کرتے ہوئے سمیرا حسین کو محکمہ چارجڈ پارکنگ کے ڈائریکٹرکاایڈیشنل چارج دے دیا گیاجبکہ کے ایم سی کے درجنوں افسران تاحال تعیناتیوں کے منتظر ہیں۔

ادارے کے سینئرافسران کو نظر انداز کرکے من پسند افسران کو پرکشش عہدوں سے نوازنے اور عدالتی احکامات کی کھلی خلاف ورزیاں کرنے پر کے ایم سی کے سینئر افسران نے ایک بار پھر ایڈمنسٹریٹر کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی اپیل کردی۔

تفصیلات کے مطابق ایدمنسٹریٹر کے ایم سی لیئق احمد نے عدالتی احکامات کو چیلنج کرتے ہوئے ایک بار پھر عدالتی احکامات کے برخلاف محکمہ چارج پارکنگ کی ایڈیشنل ڈائریکٹر کو محکمے کے ڈائریکٹر کا چارج دے دیا۔

جس کا حکمنامہ 21اپریل کو محکمہ ہیومن ریسورس مینجمنٹ نے جاری کردیا ہے جبکہ مذکورہ عہدے کے لئے کے ایم سی میں ندرجنوں اہل افسران موجود ہیں تاہم ایڈمنسٹریٹر نے ادارے کی آمدنی پر اپنی گرفت مضبوط کرنے کے لئے محکمہ چارجڈ پارکنگ سمیت متعدد محکموں کے اہم عہدوں پر عدالتی احکامات کے برخلاف من پسند افسران تعینات کر رکھے ہیں جس کی وجہ سے کے ایم سی کے سینئر افسران میں شدید اشتعال پایا جارہا ہے۔

واضح رہے سمیر حسین پر بطور میونسپل کمشنر بلدیہ وسطی بدعنوان افسران کی سرپرستی سمیت سنگین الزامات زد میں رہ چکی ہیں زرائع کا کہنا ہے کہ سمیرا حسین کو ایڈمنسٹریٹر نے اپنے لاڈلے افسر امتیاز ابڑو کی خواہیش پر کے ایم سی کے اہم عہدے سے نوازا ہے کے ایم سی افسران کا کہنا ہے کہ امتیاز ابڑو ادارے کے دیگر محکموں کے کاموں میں مداخلت کرکے افسران کے لئے سرکاری فرائض کیانجام دہی میں روکاوٹیں پیدا کر رہے ہیں۔

یاد رہے چند روز قبل عدلیہ کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے لئے کے ایم سی حکام نے چند افسران سے اضافی عہدے اور او پی ایس افسران کو عہدوں سے ہٹانے کے احکامات بھی جاری کیے تھے تاہم متعدد افسران تاحال انہی عہدوں پر کام کر رہے ہیں۔

حیرت انگیز امر یہ ہے کہ ایک طرف سندھ حکومت عدالتی احکامات پر عملدرآمد کرکے نا صرف او پی ایس افسران کو عہدوں سے ہتا رہی ہے بلکہ جن افسران کے پاس اضافی عہدے ہیں ان سے بھی ایڈیشنل چارج واپس لے رہی ہے مگر سندھ حکومت کے ماتحت ایڈمنسٹریٹر کے ایم سی بلاخوف افسران کو نوازنے کے لئے عدالتی احکامات کی خلاف ورزیاں کر رہے ہیں۔

واضح رہے ایڈمنسٹریٹر لیئق احمد نے عدالتی احکامات کی خلاف ورزیاں معمول بنالی ہیں جس کی وجہ سے اداروں کی بہتری کے لئے عدلیہ کی جانب سے دیئے گئے احکامات پر سوالیہ نشان لگ گیا ہے۔