مسنگ پرسن کی بازیابی ہمارا اولین مطالبہ ہے،شہنشاہ نقوی

40

کراچی (اسٹاف رپورٹر) جوائنٹ ایکشن کمیٹی فار شیعہ مسنگ پرسن کے احتجاجی دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے علامہ شہنشاہ نقوی نے کہا ہے کہ مسنگ پرسن کی بازیابی ہمارا اولین مطالبہ ہے۔جب تک ہمارے نوجوانوں کو بازیاب نہیں کرایا جاتا تب تک پوری استقامت کے ساتھ پرامن دھرنا جاری رہے گا۔ہم ملک میں آئین اور قانون کی عملداری چاہتے ہیں۔لاپتا افراد اگر کسی جرم میں ملوث ہیں تو ان کے خلاف آئینی و قانونی طرز عمل اپنایا جائے۔ اس ملک میں ہم سے زیادہ پر امن اور محب وطن کوئی نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ لاپتا افراد اس ملک کے شہری ہیں۔14 روز سے ان کے اہل خانہ دھرنے میں بیٹھے ہیں۔اس معاملے میں حکمرانوں کی بے حسی افسوسناک ہے۔ملک کے کسی بھی شہری کا اس طرح مسنگ ہونا آئین کے خلاف ہے۔لاپتا افراد کے اہل خانہ اپنے پیاروں کے حوالے سے اضطراب میں مبتلا ہیں،انہیں ان کے گمشدہ افراد کی زندگی کے حوالے سے درست اطلاعات فراہم کی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ ہماری قوم کی ماؤں،بہنوں، بزرگوں، بچوں کی آنکھیں اپنے پیاروں کی صورت دیکھنے کے لیے ترس گئی ہیں۔ان کے صبر کا مزید امتحان نہ لیا جائے۔