امریکا کیلئے چین سے زیادہ سنگین خطرہ کوئی ملک نہیں ہے، ایف بی آئی

173

عالمی خطرے کی تشخیص کی سالانہ رپورٹ کے اجراء کے ایک دن بعد امریکی انٹیلی جنس حکام نے سینیٹ کو چین سے بڑھتی ہوئی کشیدگی سمیت امریکا کو درپیش چیلینجز سئ متعلق آگاہ کیا۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق نیشنل انٹلیجنس کے ڈائریکٹر ، ایورل ہینس نے سینیٹ کی سلیکٹ کمیٹی برائے انٹلیجنس کو بتایا کہ چین کی حیثیت امریکہ کے حریف کی سی ہے۔ اپنی بڑھتی ہوئی طاقت کو استعمال کرنے سمیت۔ وہ اپنی آمرانہ حکومت کے حمایت کے لئے عالمی اصولوں کو کالعدم کرنے کے لئے کام کر رہا ہے۔

ایورل نے کہا کہ اگرچہ اس نے امریکا کے لئے ایک بہت بڑا چیلنج کھڑا کیا ہے تاہم اس کی اپنی معاشی ، ماحولیاتی اور آبادیاتی کمزوریاں ہیں جو اس کی بالادستی حاصل کرنے کی صلاحیت کو مزید پیچیدہ کرسکتی ہیں۔

سی آئی اے کے ڈائریکٹر ولیم برنز نے سینیٹرز کو کہا کہ چین کے ساتھ ٹیکنالوجی کا مقابلہ مسابقت چینی کمیونسٹ پارٹی کے ساتھ ہماری دشمنی کا مرکز ہے۔

دوسری جانب ایف بی آئی کے ڈائریکٹر کرسٹوفر وری نے کہا کہ امریکی جدت ، معاشی تحفظ اور جمہوریت کے لئے چین سے زیادہ سنگین خطرہ کوئی دوسرا ملک نہیں ہے۔