دبئی : رمضان میں کھلے عام کھانے پینے پر پابندی ختم

167

دبئی (انٹرنیشنل ڈیسک) متحدہ عرب امارات کی ریاست دبئی میں ماہِ صیام کے احترام میں کھانے کی اشیا کو روزہ داروں کی نظروں سے اوجھل رکھنے کے لیے ریستوران کو پردے سے ڈھاپنے کی پابندی ختم کر دی گئی۔ امریکی خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق رمضان کی مناسبت سے سٹی اسٹیٹ کے محکمہ اقتصادی ترقی نے اعلان کیا ہے کہ رمضان المبارک کے دوران ریستوران میں دن کے اوقات میں کھانے پینے کی سرگرمیوں کو چھپانے کی ممانعت نہیں ہو گی۔ سرکاری خبر رساں ادارے ایمرٹس نیوز ایجنسی نے رپورٹ کیا ہے کہ ریستوران کے اندر صارفین کو پردے لگا کر یا کوئی رکاوٹ کھڑی کرنے کے بغیر خدمات فراہم کرنے کی اجازت ہو گی۔ ملک میں ماہِ صیام کے دوران ماضی میں ریستوران مالکان کے لیے ہدایت نامے جاری کیے جاتے تھے جس کے تحت ڈائننگ ایریا کو پردے لگا کر چھپا دیا جاتا تھا، تاکہ روزہ داروں کی نظر سے محفوظ رکھا جائے۔ نئے اعلان کے بعد ریستوران کے لیے یہ بھی ضروری نہیں ہوگا کہ وہ دن کے اوقات میں کھانا پیش کرنے کے لیے خصوصی اجازت نامے حاصل کریں۔ دنیا بھر میں سیاحت کے لیے مشہور متحدہ عرب امارات کے شہر دبئی کا رخ زیادہ تر وہ سیاح کرتے ہیں، جو ساحل سمندر، شاپنگ اور بلند و بالا عمارتوں میں پارٹیوں کا شوق رکھتے ہیں۔ تاہم دیگر مہینوں کی نسبت ماہِ رمضان میں سیاحت کا یہ کاروبار مختلف پابندیوں کے سبب سست روی کا شکار رہتا ہے۔ اے پی کے مطابق رمضان المبارک میں ریستوران کو ڈائننگ کے لیے خصوصی اجازت نامے حاصل کرنے اور ڈائننگ ایریا کو روزہ داروں سے چھپانے پر پابندی ختم کرنے کا مقصد ملک میں سیاحت کو فروغ دینا بتایا جاتا ہے۔ بعض دیگر عرب اور خلیجی ریاستوں میں بھی رمضان المبارک کے دوران اس طرح کی پابندیاں عائد ہیں۔