لاڑکانہ، علی گوہر محلہ سے 22 سالہ ہندو لڑکی لاپتا ہوگئی

41

لاڑکانہ (نمائندہ جسارت) لاڑکانہ شہر کے تھانہ علی گوہر آباد کی حدود علی گوہر محلہ سے 22 سالہ ہندو لڑکی آرتی چاولہ پراسرار طور پر لاپتا ہوگئی جبکہ ورثاء کی جانب سے لڑکی کے اغوا کا مقدمہ تھانہ علی گوہر آباد پر درج کرادیا گیا۔ اس حوالے سے لڑکی کے والد ڈاکٹر ناموں مل کا کہنا تھا کہ میری 22 سالہ بیٹی آرتی بائی بیٹی ریشم بازار میں مہران بیوٹی پارلر پر کام کرتی تھی گئی تو واپس نہیں آئی جو گزشتہ 6 روز سے پراسرار طور پر لاپتا ہیں، آرتی بائی کی گمشدگی کا مقدمہ تھانہ علی گوہر آباد میں درج کیا لیکن پولیس بیٹی کو بازیاب کروانے میں ناکام ہوچکی ہے، اس حوالے سے پولیس کا کہنا ہے کہ ریشم بازار مہران بیوٹی پارلر کے مالک سے معلوم کیا تو معلوم ہوا کہ لڑکی تین سال سے بیوٹی پارلر آئی ہی نہیں۔ دوسری جانب پی پی ایم پی اے ندا کھوڑو نے ایس ایس پی لاڑکانہ اور لڑکی کے والد نمو مل سے فون پر رابطہ کرکے لڑکی کے مبینہ اغوا کے معاملے پر بات کی اور ایس ایس پی کو ہدایت کی کہ لڑکی کی بازیابی کے لیے اقدامات اٹھائے جائیں۔ اس حوالے سے ایم پی اے ندا کھوڑو کا کہنا تھا کہ لاڑکانہ پولیس مبینہ اغوا کے معاملے کی ہر پہلو سے تفتیش کررہی ہے، پولیس لڑکی کی بازیابی کے لیے جلد کسی نتیجے پر پہنچ جائے گی، ہندو لڑکی کے ورثاء کو انصاف فراہم کیا جائے گا۔