فٹبال فیڈریشن کی معطلی انتہائی تکلیف دہ ہے ، صدر پی ایس بی

99
لاہور: فیفا کی جانب سے گزشتہ روز پاکستان فٹبال فیڈریشن کی معطلی کے بعد فیڈریشن کے داخلی دروازے پر تالا لگا نظرآرہاہے

لاہور(جسارت نیوز) فیفا بیورو کے ذریعے پاکستان فٹ بال فیڈریشن (پی ایف ایف) کی معطلی انتہائی تکلیف دہ ہے ، اور لاکھوں فٹ بال کے شائقین کے لیے یہ چونکا دینے والی بات ہے۔ فیفا کے فوری فیصلے پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے صدر ، پاکستان اسپورٹس بورڈ نے کہا کہ فیفا کونسل کی طرف سے جلدی سے لیا گیا فیصلہ اس لیے قطع نہیں کیا گیا ہے کیونکہ حکومت پاکستان پہلے ہی پی ایف ایف کے کسی دھڑے کی جانب سے غیر یقینی طور پر فٹ بال ہاؤس سنبھالنے کے اقدام کی مذمت کر چکی ہے۔ صدر پی ایس بی نے کہا کہ دونوں جماعتوں کو میز پر لانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نارملائزیشن کمیٹی سے بھی درخواست کی جارہی ہے کہ وہ فیفا کی ہدایت کے مطابق پی ایف ایف کے انتخابات کے لیے روڈ میپ کا اعلان کریں۔ صدر پی ایس بی نے مشاہدہ کیا کہ فیفا کے فیصلے سے پاکستان کے فٹ بال برادران کو غمگین کردیا ہے۔ صدر پی ایس بی نے اس بات کا اعادہ کیا کہ پی ایف ایف اور نارملائزیشن کمیٹی خودمختار ادارہ ہیں اور حکومت ثالث کا کردار ادا کررہی ہے تاکہ ملک میں فٹ بال کی معمول کی سرگرمیاں بحال ہوسکیں۔ صدر پی ایس بی نے ایک بار پھر پی ایف ایف کے تمام دھڑوں سے درخواست کی کہ وہ اپنا بلاجواز موجودہ مؤقف ترک کریں اور ان کے تنازعات کو خوش آئند طریقے سے بات چیت کے ذریعے حل کریں۔ صدر نے فیفا حکام سے اپیل کی کہ وہ پاکستان میں فٹ بال کے شائقین کی خاطر پی ایف ایف کی موجودہ معطلی کو معاف کریں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان بین الاقوامی ذمہ داریوں کو برقرار رکھتے ہوئے اس معاملے کے پرامن حل میں فیفا کو آسان بنانے کا وعدہ کرتی ہے۔