کامیاب مذاکرات کے بعد لیڈی ہیلتھ ورکرز کا دھرنا ختم

43

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) کراچی میں احتجاج کرنے والی ایک لیڈی ہیلتھ ورکر کو گاڑی نے ٹکر مار دی جس کے نتیجے میں وہ زخمی ہو گئی، جبکہ لیڈی ہیلتھ ورکرز نے کامیاب مذاکرات کے بعد دھرنا ختم کر دیا۔لیڈی ہیلتھ ورکرز کی صدر بشریٰ آرائیں نے دھمکی دی کہ اگر 45 دن میں مطالبات پورے نہیں کیے گئے تو پورا سندھ بلاک کر دیں گے۔ لیڈی ہیلتھ ورکرز نے جمعرات کو کراچی میں پی آئی ڈی سی سگنل کے قریب اپنے مطالبات کی منظوری کے لیے دھرنا دیا، اس دوران ایک لیڈی ہیلتھ ورکر کو ایک گاڑی نے ٹکر مار دی جس سے وہ زخمی ہو گئی۔زخمی لیڈی ہیلتھ ورکر کو طبی امداد کے لیے ایمبولینس کے ذریعے اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔دوسری جانب کامیاب مذاکرات کے بعد کراچی کی لیڈی ہیلتھ ورکرز نے دھرنا ختم کر دیا جس کے بعد سڑک ٹریفک کیلیے کھول دی گئی۔لیڈی ہیلتھ ورکرز کی صدر بشری آرائیں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ڈی جی لیڈی ہیلتھ ورکرز سے مذاکرات کامیاب ہوگئے۔