چیئرمین نیب خود کو مقدس گائے نہ سمجھیں‘ اراکین پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی

63

اسلام آباد( آ ن لائن ) پارلےمانی پبلک اکاﺅنٹس کمےٹی نے قومی احتساب بےورو کے چےئر مےن جسٹس ( ر) جاوےد اقبال کے کمےٹی مےں نہ آنے پر شدےد ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے ان کے نمائند ے ڈائرےکٹر فنانس کو کمےٹی سے نکال دےا اور کہاکہ چیئرمین نےب خود کو مقدس گائے اور قانون سے بالاتر سمجھتے ہےں سےاستدا نوں کے اےک اےک انچ کا حساب رکھتے ہےں خود جو قومی خزانے سے خرچ کررہے ہےں اس کا حساب دےنے کوتےار نہےں ۔ کمےٹی نے سےکرٹری اسٹےبشلمنٹ، سےکرٹری فےڈرل پبلک سروس کمےشن کے نہ آنے پر بھی ان کے نمائندوں کو بھی اجلاس سے نکال دےا جبکہ پی اےس ڈی نے وزارت پیٹرولےم کے مالےاتی نظام کو ناقص قرار دےتے ہوئے اس کی تنظےم نو کی بھی ہداےت کردی ۔ پارلیمانی پبلک اکاو¿نٹس کمیٹی کا اجلاس چیئرمین کمیٹی رانا تنویر حسین کی زیر صدارت ہو ا جس مےںمختلف وزارتوں کی طرف سے ہر ماہ محکمانہ اکاو¿نٹس کمیٹی کے اجلاس منعقد نہ کرنے جبکہ چیئرمین نیب کے نہ آنے پر کمیٹی نے اظہار برہمی کےا،سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ کے نہ آنے پرا سپیشل سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ کو اجلاس سے نکال دیاگیا ، سیکرٹری فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے نہ آنے پر بھی برہمی کا اظہار کےا گےا ۔ کمےٹی نے اجلاس میں نہ آنے والے سیکرٹریوں کو اظہار ناراضگی کے خطوط لکھنے کا فیصلہ کےا ہے ۔چیئرمین نیب جسٹس( ر) جاوید اقبال کے اجلاس میں نہ آنے پر اراکین پھٹ پڑے اور کہا کیا چیئرمین نیب قانون سے بالاتر ہیں۔اپنے آپ کو مقدس گائے سمجھتے ہیں۔