پی ٹی اے نے موبائل فون بلاک کرنے کا نیا نظام متعارف کرادیا

97

اسلام آباد(خبر ایجنسیاں) پی ٹی اے نے گمشدہ، چوری شدہ اور چھینے گئے موبائل فونز کو بلاک کرنے کے لیے نئے خود کار ’’گمشدہ اور چوری شدہ ڈیوائس سسٹم‘‘کا آغاز کر دیا۔ چوری اور گمشدہ فون بلاک کرنے کے لیے نیا نظام نافذ کردیا گیا ہے، اس حوالے سے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) کا کہنا ہے کہ گمشدہ، چوری شدہ اور چھینے گئے موبائل فونز کو بلاک کرنے کے لیے نئے خود کار ’’گمشدہ اور چوری شدہ ڈیوائس سسٹم‘‘ (ایل ایس ڈی ایس) کا آغاز ہوگیا ہے۔پی ٹی اے کا کہنا ہے کہ ہے کہ نیا نظام ان صارفین کے لیے مددگار ثابت ہو گاجو موبائل فون چوری ہونے، چھینے جانے یا گم ہو جانے کی صورت میں اسے بلاک کرانا چاہتے ہیں، صارفین اپنے موبائل کے ممکنہ غلط استعمال کو روکنے کے لیے ایسے فون سیٹ کے آئی ایم ای آئی بلاک کرانے کیلیے پی ٹی اے کو درخواست دے سکتے ہیں۔پی ٹی اے کے مطابق ایل ایس ڈی ایس ایک خودکار نظام ہے، اور پی ٹی اے کی ڈیوائس آئی ڈینٹٹی فکیشن رجسٹریشن اینڈ بلاکنگ سسٹم (ڈی آئی آر بی ایس) کے ساتھ مربوط ہے، چوری شدہ موبائل فون شکایت کے اندراج اور ضروری تصدیق کے بعد 24 گھنٹوں کے اندر بلاک کردیا جائے گا۔ صارفین پی ٹی اے کی ویب سائٹ پر موجود آن لائن کمپلینٹ مینجمنٹ سسٹم (سی ایم ایس) کے ذریعے پی ٹی اے کو فون بلاکنگ کے لیے درخواست دے سکتے ہیں، مزید معلومات و سوالات کے لیے صارف پی ٹی اے کنزیومر اسپورٹ سینٹر(سی ایس سی) ٹول فری نمبر55055- 0800 پر (ہفتے کے 7 دن صبح 9 بجے سے رات 9 بجے تک) رابطہ کر سکتے ہیں۔بلاکنگ درخواست کے کامیاب اندراج کے بعد درخواست کنندہ کو ایک حوالہ نمبر فراہم کیا جائے گا، گمشدہ فون مل جانے کی صورت میں شکایت کنندہ کو سی ایم ایس کے ذریعہ ان بلاکنگ کے لیے بھی اسی طریقہ کار پر عمل کرنا ہوگا اور شکایتی حوالہ نمبر کے ساتھ دیگر لازمی تفصیلات بھی فراہم کرنی ہوں گی، جو انہوں نے موبائل فون بلاک کرتے وقت فراہم کی تھیں، موبائل فون ان بلاک ہوجانے کے بعد صارف کو فراہم کردہ نمبر پر ایک ایس ایم ایس موصول ہوگا۔