مقبوضہ کشمیر:بھارتی فوجی کی گولیوں سے چھلنی لاش برآمد

88

جموں(اے پی پی) غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میں راجوری قصبے سے ایک بھارتی فوجی کی گولیوں سے چھلنی لاش برآمد کی گئی ہے۔کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق ایک سرکاری عہدیدار نے بتایا کہ لاش قصبے کے گوردان علاقے کے قریب بھارتی فوج کے ایک کیمپ سے برآمد کی گئی ہے۔ایک پولیس افسر نے صحافیوں کو بتایا کہ لاش کو طبی معائنے کے لیے اسپتال منتقل کیا ہے۔ موت کی وجہ معلوم کرنے کے لیے تفتیش جاری ہے۔علاوہ ازیںحریت فورم کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق کو ڈیڑھ برس سے زاید عرصے کی گھر میں غیر قانونی نظر بندی سے رہا کیے جانے کا امکان ہے۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ علاقے میں بھارتی سرکاری ذرائع نے میڈیا کو بتایا ہے کہ میر واعظ کو کل 5مارچ (بروز جمعہ) سے پہلے پہلے رہا کیا جائے گا۔ میر واعظ کو جمعہ کے روز سری نگر کی تاریخی جامع مسجد میں نماز جمعہ کے اجتماع سے بھی خطاب کرنے کی اجازت دیے جانے کا امکان ہے۔ دوسری جانب پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کی صدر محبوبہ مفتی نے ہائیکورٹ سے رجوع کیا ہے جس میں عدالت سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ ان کے پاسپورٹ کے اجراکے لیے بھارتی حکومت کو ہدایات جاری کرے۔