پولیس اہلکار گرفتار نوجوان کو چھوڑنے کے لیے رشوت مانگ رہا ہے، شوکت علی ملاح

72

میہڑ (نمائندہ جسارت) میہڑ کے گاؤں صدا ڈنو ماچھی کا رہائشی شوکت علی ملاح، عبدالغفار ملاح منٹھار، منظور علی، علی محمد ملاح کی جانب سے نیشنل پریس کلب میہڑ کے آگے میہڑ کے این شاہ اور فریدآباد پولیس کیخلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ تین روز قبل میہڑ، فرید آباد کے این شاہ پولیس اور سی آئی اے پولیس بھاری نفری کے ہمراہ گاؤں پر چڑھائی کر کے ہمارے نوجوان صدام حسین ملاح کو گرفتار کرکے غائب کردیا، جس کو ابھی تک ظاہر نہیں کیا گیا۔ انہوں نے الزامات لگاتے ہوئے کہا کہ اے ایس آئی ندیم سولنگی گرفتار نوجوان صدام حسین ملاح کو چھوڑنے کے لیے دو لاکھ روپے رشوت مانگ رہا ہے، ہم اعلیٰ عدلیہ، آئی جی سندھ، ایس ایس پی دادو سے مطالبہ کرتے ہیں کہ معاملے کا نوٹس لے کر بے گناہ گرفتار نوجوان کو آزاد کر کے انصاف فراہم کیا جائے۔