سندھ اسمبلی کے اجلاس میں پی ٹی آئی کا باغی اراکین پر حملہ اور پٹائی

138

کراچی: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے اراکین کی جانب سے منحرف ساتھیوں پر ایوان میں حملہ کیا گیا ہے اور  باغی اراکین کی پٹائی کردی ۔

میڈیا  رپورٹس  کےمطابق سندھ اسمبلی کا اجلاس جاری تھا کہ اس دوران تحریک انصاف کے تین باغی ارکان کریم بخش گبول ، شہریار شر اور اسلم ابڑو ایوان میں پہنچے اور حاضری لگائی جبکہ حکومتی اراکین نے تینوں ایم پی ایز کا استقبال کیا جس پر پی ٹی آئی اراکین آگ بگولہ ہوگئے اور شور شرابا شروع کردیا۔

میڈیا کے مطابق سندھ اسمبلی میں باغی ارکان کے آنے پر پی ٹی آئی کے پہلے سے موجود اراکین نے شور شرابا شروع کردیا اور آپس میں گتھم گتھا ہوگئے جبکہ پی ٹی آئی اراکین نے باغی اراکین کی خوب پٹائی لگائی جس پر پیپلز پارٹی اراکین بیچ بچاؤ کروانے کے لیے آگئے۔

بیچ بچاؤ میں پی ٹی آئی اور پیپلز پارٹی کے ارکان بھی آپس میں گتھم گتھا ہو گئے اور پیپلزپارٹی اراکین کی جانب سے تحریک انصاف کے اراکین کے درمیان بیچ بچاؤ کی کوشش بھی کی گئی جبکہ تحریک انصاف کی سدرہ عمران اور کیماڑی سے منتخب رکن اسمبلی شاہنواز جدون کو دھکے دیے گیے۔

ویڈیو میں سندھ اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کے دوران رکن پی ٹی آئی سعید آفریدی کو صوبائی وزیر مکیش چاؤلہ کو زمین پر گراتے دیکھا جاسکتا ہے جبکہ  اسپیکر سندھ اسمبلی نے ایوان میں ہلڑ بازی کے بعد اجلاس کل تک ملتوی کردیا ہے۔

دوسری جانب پی ٹی آئی رہنما اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرنے کے لیے جمع ہوئے تو اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ اور صحافیوں کے درمیان تلخ کلامی ہوگئی جس کے بعد وہ میڈیا سے گفتگو نہیں کرسکے۔

واضح رہے پی ٹی آئی کے ان تین اراکین نے سینیٹ الیکشن میں پارٹی کو ووٹ نہ دینے کا اعلان کیا ہے جبکہ ان کا الزام ہے کہ گورنر ہاؤس میں امیدواروں کو سینیٹ کے ٹکٹ بانٹے گیے اور پی ٹی آئی رہنما خرم شیر زمان اور فردوس شمیم نے ان کے اغوا کا دعویٰ کیا تھا جس پر ان تینوں اراکین کی گزشتہ روز ویڈیو بھی سامنے آئی ہے۔