“گرین لائین پروجیکٹ حکومتوں کی نا اہلی کے باعث مکمل نہیں ہو پارہا”

208

کراچی:امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن کا کہنا ہے کہ وفاقی و صوبائی حکومت کی نا اہلی اور عوامی مسائل سے عدم دلچسپی کے باعث اہل کراچی کے لیے ٹرانسپورٹ کا صرف ایک منصوبہ  گرین لائین پروجیکٹ مکمل نہیں ہوپارہا ۔

حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ حکومت آئے روز منصوبے کو جلد تکمیل کے اعلانات اور خوشخبریاں سنانے کے بجائے منصوبے کی فی الفور مکمل کر کے فعال بنائے تاکہ شہریوں کو ٹرانسپورٹ مسائل سے کچھ تو نجات حاصل ہو سکے ۔

حافظ نعیم الرحمن کا کہنا تھا کہ 3 کروڑ سے زائد آبادی والے شہر میں ٹرانسپورٹ کے مسائل کے لیے ضروری ہے کہ نعمت اللہ خان ایڈوکیٹ کے دور میں شروع کیے گئے ماس ٹزانزٹ پروجیکٹ پر عمل در آمد کو یقینی بنایا جائے ۔

امیر کراچی نے مزید کہا کہ  سرکلر ریلوے کو مکمل اور سابقہ شکل میں بحال کیا جائے اور فوری طور پر کراچی میں کم ازکم ایک ہزار بسیں چلائی جائیں ،کراچی میں پبلک ٹرانسپورٹ کی صورتحال بہت خراب ہے ، لاکھوں شہری روزانہ شدید ذہنی و جسمانی اذیت کا شکار ہو تے ہیں۔

حافظ نعیم الرحمن کا مزید کہنا تھا کہ لاہور ، پشاور اور ملتان میں میٹرو بسیں چل رہی ہیں لیکن ملک کے سب سے بڑے شہر کے باشندے چنگ چی رکشوں میں سفر کرر ہے ہیں جو حکمرانوں کے لیے انتہائی شرم کا مقام ہے ، حکمران پارٹیوں اور حکومتوں نے شہریوں کے مسائل حل کرنے میں ہمیشہ مجرمانہ غفلت و لاپرواہی کا مظاہرہ کیا ہے اور آج بھی کیا جا رہا ہے ۔