افغانستان میں چیک پوسٹ پر حملہ، 9اہلکا رہلاک

74

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک) افغانستان کے صوبہ لوگار کی چیک پوسٹ پر حملے میں 9 سیکورٹی اہلکار ہلاک ہوگئے۔ عالمی خبر رساں ادرے کے مطابق افغانستان کے صوبہ لوگار میں ایک سیکورٹی چیک پوسٹ پر مسلح افراد نے دھاوا بول دیا جس پر اہلکاروں نے بھی شدید مزاحمت کا مظاہرہ کیا۔ دو گھنٹے تک جاری رہنے والی جھڑپ میں پبلک اپ رائزنگ سیکورٹی فورس کے 9 اہلکار ہلاک ہوگئے۔ حملہ آور جاتے ہوئے اپنے ساتھ سرکاری اسلحہ اور ایک گاڑی بھی لے گئے جب کہ دو اہلکاروں کو یرغمال بنانے کی بھی اطلاع ہے۔ لوگار کے گورنر کے ترجمان نے حملے کی ذمہ داری طالبان پر عائد کی ہے۔طالبان نے حکومت کی جانب سے لوگار حملے کی ذمہ داری عائد کرنے پر الزام کی تردید یا تصدیق نہیں کی ہے تاہم اس لاقے میں سیکورٹی فورسز اور طالبان جنگجوئوں کے درمیان جھڑپیں ہوتی رہتی ہیں۔ علاوہ ازیں افغانستان میں سیکورٹی فورسز کے فضائی حملے میں آٹھ طالبان ہلاک اور متعدد ز خمی ہو گئے ۔ غیر ملکی خبر رسا ں ادارے کے مطابق صوبہ ہلمند کے ضلع نہر سراج میں سیکورٹی فورسز نے طالبان کے ٹھکانے کو حملے کا نشانہ بنایا ۔ حملے میں آ ٹھ جنگجو ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہو گئے۔واضح رہے کہ قطر کے دارالحکومت دوحہ میں افغان طالبان اور کابل حکومت کے درمیان مذاکرات جاری ہیں جو تاحال کسی نتیجے پر نہیں پہنچ سکے ہیں جب کہ کابل سمیت کئی شہروں میں مسلح کارروائیاں جاری ہیں جس میں رواں برس 72 سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔