پاکستان بار کونسل کا 25 فروری کو ملک گیر ہڑتال کا اعلان

66

اسلام آباد(آن لائن)پاکستان بار کونسل نے وفاقی دارلحکومت میں وکلا کے چیمبرز گرانے سے متعلق اپنے 232 ویں اجلاس میں وکلا کے خلاف درج ایف آئی آرز واپس لینے، جاری توہین عدالت کے نوٹسز و وکلا کیخلاف جاری انضباطی کارروائیاں واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے وکلاء سے اظہار یکجہتی کیلئے 25 فروری کو ملک بھر میں مکمل ہڑتال کا اعلان اور مطالبات تسلیم نہ کیے جانے کی صورت میں مارچ کے پہلے ہفتے میں ملک بھر کے وکلاء نمائندہ اجلاس بلانے کااعلان کردیا ۔پاکستان بار کونسل کی طرف سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ ایف ایٹ کچہری میں چیمبر گرانے کے واقعے کے بعد وکلا کا ہائی کورٹ کے ججز کے ساتھ روا رکھے جانے والے عمل کی پاکستان بار کونسل مذمت کرتی ہے۔ واقعہ میں ملوث وکلا کے خلاف کاروائی کا اختیار بھی پاکستان بار کونسل کے پاس ہے۔ وکلا برادری نہ سمجھتی ہے بینچ اور بار مل بیٹھ کر یہ معاملہ حل کر سکتے ہیں ، اسی بنیاد پر چیف جسٹس اسلام آباد ہے کورٹ سے وفد کی صورت میں ملاقات کا وقت بھی منگا گیا ہے۔بار کونسل کی طرف سے جاری اعلامیہ میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ وکلاء کیخلاف اسلام آباد ہائی کورٹ کی طرف سے شروع کردہ انضباطی کارروائیاں ختم کرتے ہوئے ایف ایٹ کچہری میں وکلاء کے مزید چیمبرز گرانے کے احکامات کو معطل یا واپس کیے جائیں بصورت دیگر ملک بھر کے وکلاء نمائندہ اجلاس میں آئندہ کا لائحہ عمل طے کریں گے۔