وزیراعلیٰ سندھ کی بلدیاتی اداروں کے پنشن مسائل حل کرنیکی ہدایت

94

کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے تمام محکموں خصوصاً بلدیاتی اداروں، اتھارٹیز اور مختلف بورڈز اور دیگر نیم سرکاری تنظیموں کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے ملازمین کی پنشن کے معاملات حل کریں اور انہیں اس حوالے سے رپورٹ پیش کریں۔ انہوں نے منگل کو نیو سندھ سیکرٹریٹ میں کابینہ کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہا کہ ایک ملازم جو اپنی ملازمت سے سبکدوش ہوتا ہے اسے لازمی طور پر اس کی پنشن اور واجبات دیے جائیں۔ وزیر تعلیم سعید غنی اور سیکرٹری اسکول ایجوکیشن احمد بخش ناریجو نے ڈرافٹ ٹرانسفر اینڈ پوسٹنگ پالیسی پیش کی جس میں کہا گیا ہے کہ تمام قابل عمل اسکولوں کو کھولنا ، پرائمری اسکولوں میں اساتذہ کی دستیابی کو یقینی بنانا ، طلبہ اساتذہ کا تناسب برقرار رکھنا اور سائنس اور انگریزی کے اساتذہ کی دستیابی کو یقینی بنانے کے حوالے سے محکمہ تعلیم نے ٹرانسفر پالیسی تشکیل دی ہے‘ اساتذہ کے عام تبادلوں کو ہر سال مارچ کے مہینے میں مطلع کیا جائے گا۔ کابینہ نے اسکول اساتذہ کے تبادلے اور پوسٹنگ پالیسی کی منظوری دے دی۔ مشیر ماحولیات مرتضیٰ وہاب نے کابینہ سے درخواست کی کہ وہ 2 ملحقہ جنگلات کاٹھور اور حیات گاہو میں پام آئل کے درخت کی شجر کاری کے لیے3000 ایکڑ زمین سی ڈی اے کو فراہم کی جائے تاکہ پام آئل کی پیداوار کے لیے پام آئل کے درختوں کی شجرکاری کی جاسکے۔ وزیراعلی سندھ نے کہا کہ کولڈ اسٹوریجز کو ترجیحی طور پر نجی شعبے میں یا پبلک پرائیویٹ شراکت داری کی بنیاد پر ڈویژنل ہیڈ کوارٹر کی سطح پر قائم کیا جانا چاہیے‘ سولر ٹیوب ویلوں کی تنصیب اور زرعی آلات یا سازو سامان کی فراہمی کے لیے حکومت چھوٹے کاشتکاروں کو سبسڈی دے گی۔ کابینہ نے ایس ای زیڈ دھابیجی میں گرڈ اسٹیشن کی تنصیب کے لیے7 ایکڑ اراضی کی فراہمی کی منظوری دی۔