لندن: بورس جانسن کا لاک ڈاؤن ختم کرنے کا عندیہ

108

لندن: برطانوی وزیراعظم بورس جانسن نے کورونا وائرس کے سبب نافذ لاک ڈاؤن میں مرحلہ وار نرمی کا فیصلہ کرتے ہوئے اس حوالے سے روڈ میپ کا اعلان کردیا ہے جبکہ ویلز، اسکاٹ لینڈ اور شمالی آئر لینڈ میں لاک ڈاؤن سےمتعلق مختلف حکمت عملی اختیار کرینگے۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق  برطانوی وزیراعظم بورس جانسن نے لندن میں پارلیمنٹ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 21 جون تک لاک ڈاؤن کی تمام پابندیاں ختم کردی جائیں گی  جبکہ یہ لاک ڈاؤن 4 مرحلوں میں ختم کیا جائے گا اور ہر مرحلے کے درمیان 5 ہفتوں کا وقفہ ہوگا اور پہلا مرحلہ دو حصوں پر مشتمل ہوگا۔

برطانوی وزیراعظم کا کہناتھا کہ 8 مارچ سے تمام اسکول کھل جائیں گے اور  آؤٹ ڈور کھیلوں کی اجازت ہوگی جبکہ بعض اسکول ٹیسٹ کے انتظامات کے لیے کچھ تاخیر سے کھل سکتے ہیں، تاہم 8 مارچ سے عوامی مقامات میں 2 افراد مل کر پکنک کرسکیں گے۔

وزیراعظم بورس جانسن کا مزید کہناتھا کہ 29 مارچ سے 2 گھرانوں کے 6 افراد  گھر سے باہر اور گارڈن میں ملاقات کرسکیں گے اور 29 مارچ سے ٹینس، باسکٹ بال، گالف کورس اور فٹ بال گراؤنڈ کھل جائیں گے جبکہ کئیر ہومز کے ہر رہائشی کو ایک شخص سے ملاقات کی اجازت ہوگی اور 29 مارچ سے لوگ اپنے علاقوں سے باہر جاسکیں گے، لیکن رات گزارنے کی اجازت نہیں ہوگی۔

برطانوی وزیراعظم کا کہناتھا کہ 12 اپریل سے دیگر دکانیں، ہیر ڈریسرز، جم، آؤٹ ڈور مہمان نوازی کا شعبہ کھلے گا اور 12 مارچ سے مختلف گھرانوں کے افراد بئیر گارڈن میں ملاقات بھی کرسکیں گے جبکہ 17 مئی سے پب، ریسٹورنٹ اور سینما کھل جائیں گے۔

بورس جانسن کے مطابق مرحلہ وار پابندیوں کو ختم کرنے سے قبل 4 شرائط کو لازمی پورا کرنا ہوگا، جن میں ویکسین پروگرام، اموات میں کمی، انفیکشن کی شرح اور نئے وائرس کی صورت حال شامل ہیں۔

وزیراعظم بورس جانسن کا کہناتھا کہ حکومت باقاعدگی سے اقدامات کا جائزہ لے گی اور سماجی دوری کم کرنے اور بین الاقوامی سفر کی اجازت کا جائزہ لیا جائے گا جبکہ ویلز، اسکاٹ لینڈ اور شمالی آئر لینڈ لاک ڈاؤن سےمتعلق مختلف حکمت عملی اختیار کرینگے۔