دودھ کی قیمت میں10روپے فی لٹر اضافہ

100

کراچی

ڈیری فارمز نے شہری حکومت کی خاموشی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے دودھ کی قیمت میں10روپے فی لٹر اضافہ کردیا ہے جس کے بعد شہر میںدودھ کی قیمت130روپے لٹر تک جاپہنچی ہے ۔تفصیلات کے مطابق ڈیری فارمرز نے دودھ کی قیمت میںیکم فروری سے 20روپے اضافہ کا اعلان کررکھا تھا

،تاہم شہری حکومت کے دبآئو  کے باعث ڈیری فارمرز نے دودھ کی قیمت میںاضافہ نہیں کیا ،تاہم اس کے بعد شہری حکومت کی مسلسل خاموشی اور اس حوالے سے فعال نہ ہونے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ڈیری فارمرز نے شہر کے مختلف علاقوںمیںدودھ کی قیمت میں10روپے لٹر اضافہ کردیا،دودھ کی فی لٹر سرکاری قیمت 94روپے ہے،تاہم شہر میں گزشتہ کئی ماہ سے دودھ 120روپے لٹر میںفروخت کیا جارہا تھا اور دس روپے اضافے کے بعد اب دودھ کی قیمت130روپے لٹر کی سطح پر جاپہنچی ہے ،بتایا جاتا ہے

کہ شہر کے مختلف علاقوں گلشن اقبال،گلستان جوہر،لانڈھی،قائد آباد،کورنگی،کیماڑی اور شاہ فیصل کالونی سمیت دیگر میں دودھ 130روپے لٹر میں فروخت کیا جارہا ہے جو کہ سرکاری قیمت سے36روپے زائد ہے،اس حوالے سے ڈیری فارمرز کا کہنا ہے کہ پیداواری لاگت میں اضافہ پر دودھ کی قیمت میںاضافہ ناگزیر تھا اور شہری حکومت نے ہم سے مہنگائی ے تناسب کے اعتبار سے دودھ کی قیمتوں میںرد و بدل کا وعدہ کررکھا تھا جو کہ وفا نہیںکیا گیا،مہنگائی کے باعث ڈیری فارمرز کے اخراجات میں بھی اضافہ ہوا ہے اور اسی کو مد نظر رکھتے ہوئے دودھ کی قیمت میں اضافہ کیا گیا ہے