بھائی کے قاتل مقدمے سے دستبرداری پر دبائو ڈال رہے ہیں، اسماعیل میمن

73

بدین (نمائندہ جسارت) میرے بڑے بھائی کے قاتل اور اس کے سہولت کاروں کی جانب سے مقدمہ سے دستبرداری کے لیے مجھے خطرناک نتائج کی دھمکیاں دی جارہی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار بدین کے معزز شہری لاء کالج کے شاگرد سہیل اسماعیل میمن نے مقامی صحافیوں سے باتیں کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ تین سال قبل میرے بڑے بھائی این آر ایس پی بدین ضلع کے افسر بابو غلام رسول میمن کو بسم اللہ بیکری کے سامنے گاڑی سے کچل کر قتل کیا تھا، قاتل منصور عرف پپی میمن کو گرفتار کرلیا گیا اور عدالت نے ہمیں انصاف دیا، میرے بھائی کے قاتل کو سزا ہوئی چند مہینوں کے بعد ضمانت پر جیل سے باہر آگیا، باہر آتے ہی مجھے خطرناک نتائج کی دھمکیاں دینا شروع کردیں۔ میرے بھائی کے قاتل اور اس کے سہولت کار مقدمے کی تاریخ پر عدالت جاتے ہوئے میرے پیچھے لگتے اور مقدمہ سے دستبردار ہوجانے اور قتل کی دھمکیاں دیتے ہیں۔ انہوں نے چیف جسٹس، چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ اور سیشن جج بدین سے اپیل کی کہ مجھے دھمکیاں دینے والوں کیخلاف قانونی کارروائی کرکے مجھے تحفظ دیا جائے اگر مجھے کچھ بھی ہوا اس کی ذمے داری منصور عرف پپی میمن اور اس کے سہولت کار ہوں گے۔