حیدرآباد میونسپل کارپوریشن ،سنئیر ملازمین کا ترقیوں کیلیے جدوجہد کا آغاز

9

حیدر آباد (اسٹاف رپورٹر) میونسپل کارپوریشن حیدرآباد کے سینئر ملازمین نے ایڈمنسٹریٹر اور میونسپل کمشنر کے عدالت عظمیٰ اور میرٹ کیخلاف ملازمین کی غیرقانونی ترقیوں کی کوشش پر ریجنل ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ کے سخت نوٹس پر ان کے حق میں میونسپل کمشنر اور ایڈمنسٹریٹر کے دفاتر پر بینرز اور پوسٹرز آویزاں کردیے، ریجنل ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ حیدرآباد نے گریڈ 16 سے گریڈ 18 تک حالیہ ترقیوں کی منظوری کے لیے میونسپل کمشنر کے خط پر ملازمین کا ریکارڈ، اختیارات، ضابطے، قوانین، سینئر ملازمین کی فہرستیں، ترقیوں پر اعتراضی درخواستیں سمیت دیگر تمام ریکارڈ طلب کیا تھا۔ میونسپل کارپوریشن حیدرآباد میں عرصہ دراز سے ترقیوں سے محروم سینئر ملازمین نے ترقیوں کے لیے عملی جدوجہد شروع کرتے ہوئے حالیہ ترقیوں کے لیے تشکیل دی گئی ڈی پی سی کمیٹی کے فیصلوں کو مسترد کرتے ہوئے میونسپل کمشنر اور ایڈمنسٹریٹر کو عدالت عظمی کے آئوٹ آف ٹرن پروموشن، ڈیپوٹیشن، کیڈر تبدیلی، اپ گریڈیشن، انڈکیشن ختم کرنے کے احکامات پر اس کی روح کے مطابق عملدرآمد کرنے کے لیے سیکڑوں تحریری درخواستیں ریجنل ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ حیدرآباد سمیت دیگر حکام کو جمع کرائی ہیں، جس پر ریجنل ڈائریکٹر عبیداللہ صدیقی نے سخت نوٹس لیتے ہوئے میونسپل کمشنر شفیق علی شاہ کی جانب سے 16 فروری 2021ء کو گریڈ 16 سے گریڈ 18 تک ملازمین کی ترقیوں کی منظوری کے لیے لکھے گئے خط کے جواب میں لکھا ہے کہ آپ کی جانب سے بھیجے گئے خط کے ساتھ ڈی پی سی کمیٹی کی کوئی دستاویزات منسلک نہیں، مذکورہ دستاویزات سمیت گریڈ 16 کے اسسٹنٹ، گریڈ 14 کے سینئر کلرک، گریڈ 11 کے جونیئر کلرک کی سینارٹی فہرستیں اور محکمہ ہیلتھ کے ملازمین، سینٹیشن، فائر بریگیڈ ڈپارٹمنٹ، ٹیکسنیشن ڈپارٹمنٹ، مکینکل اینڈ الیکٹریکل، ورکشاپس ملازمین کی ڈی پی سی کمیٹی میں پیش کی جانے والی دستاویزات فراہم کی جائیں اور ڈی پی سی کمیٹی کس حکم نامے کے تحت تشکیل دی گئی اور ڈی پی سی کمیٹی قائم کرنے کے لیے سیکرٹری بلدیات کی جانب سے احکامات دیے گئے تھے۔ ڈی پی سی کمیٹی نے کس قوانین اور ضابطے کے تحت ملازمین کی ترقیوں کی سفارش کی ہے۔ ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ نے اپنے خط میں مزید لکھا ہے کہ مذکورہ ڈی پی سی کمیٹی کے فیصلوں پر جن ملازمین نے اعتراضی درخواستیں، اپیل، ڈی سی کمیٹی اور افسران کیخلاف جو درخواستیں دائر کی ہیں اس پر رپورٹ فراہم کی جائے۔ ریجنل ڈائریکٹر کے نوٹس پر بلدیہ کے سینئر ملازمین نے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے ان کے حق میں میونسپل کمشنر اور ایڈمنسٹریٹر کے دفاتر پر بینرز اور پوسٹر آویزاں کیے ہیں جن پر انہیں مبارکباد دی گئی ہے، سینئر ملازمین کو عدالت عظمیٰ کے احکامات اور میرٹ کے مطابق ترقیاں دینے کا مطالبہ کیا ہے۔