واشنگٹن: پاکستانی سفارت کی جانب سے یکم فروری سے مینوئل ویزوں کا اجرا بند

183

واشنگٹن: امریکا بھر میں موجود پاکستانی سفارت خانہ اور قونصل خانے یکم فروری 2021 سے مینوئل ویزوں کا اجرا روک دیں گے جبکہ پاکستانی سفارت خانہ کا کہنا ہے کہ  ویزا حاصل کرنے کے خواہشمندوں کو آن لائن  درخواستیں جمع کروانے کی ہدایت کی جاتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان آئندہ ماہ سے مینوئل ویزوں کا اجرا بند کردے گا اور غیر مقیم پاکستانیوں اور دیگر افراد جو کہ وہاں کا سفر کرنا چاہتے ہیں انہیں الیکٹرانک یا ای-ویزوں کے لیے آن لائن اپلائی کرنے کا کہا گیا ہے۔

واشنگٹن میں موجود پاکستانی سفارت خانے نے ایک نوٹیفکیشن جاری کرتے ہوئے بتایا کہ ای-ویزا طریقہ کار پر عملدرآمد کے سلسلے میں حکومت پاکستان کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے امریکا بھر میں موجود پاکستانی سفارت خانہ اور قونصل خانے یکم فروری 2021 سے مینوئل ویزوں کا اجرا روک دیں گے۔

رپورٹ کے مطابق سفارت خانے کے بیان میں کہا گیا کہ ویزا حاصل کرنے کے خواہشمندوں کو آن لائن  درخواستیں جمع کروانے کی ہدایت کی جاتی ہے۔

امریکہ میں موجود سفارت خانے کے ایک سینئر عہدیدار کا کہنا تھا کہ اس تبدیلی کا اطلاق دنیا بھر میں موجود تمام پاکستانی سفارت خانوں پر ہوگا اور وہ یکم فروری سے مینوئل ویزوں کا اجرا روک دیں گے۔

خیال رہے پاکستان نے کئی سال قبل مینوئل پاسپورٹ کا اجرا روک دیا تھا جبکہ ویزوں کے علاوہ پاکستانی سفارتخانے قومی شناختی کارڈ اور اسی طرح کی دیگر دستاویزات کے لیے بھی درخواستیں نہیں وصول کرسکیں گی اور اب یہ تمام خدمات آن لائن دستیاب ہوں گی۔

دوسری جانب یہ تبدیلی شمالی امریکا اور یورپ میں بالخصوص دوہری شہریت کی اجازت نہ دینے والے ممالک میں مقیم پاکستانیوں پر اثر انداز ہوگی جبکہ آسٹریلیا، برطانیہ اور امریکا جیسے ممالک جوکہ دہری شہریت کی اجازت دیتے ہیں وہاں لوگ اپنے پاسپورٹ پر ویزے کی مہر لگواکر سفر کرنے کو ترجیح دیتے ہیں کیوں کہ اپنے آبائی ملک کے پاسپورٹ پر سفر کرنا اکثر شکوک و شبہات کو جنم دیتا ہے۔

پاکستانی نژاد امریکی شہری سعادت علی کا کہناتھا کہ یہ ان لوگوں کے لیے اچھا ہے جو کمپیوٹر کے استعمال میں مہارت رکھتے ہیں لیکن بہت ایسے افراد ہیں جنہیں یہ معلومات نہیں ہیں اس لیے ہمیں ان کی مدد کرنے کے لیے کوئی نظام بنانے کی ضرورت ہے۔