”عمران اسماعیل ہم سے 50 لاکھ لیں اور گورنر ہاؤس چھوڑ دیں“

277

امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پی ٹی آئی حکومت نے قوم سے وعدہ کیا تھا کہ ایک کروڑ ملازمتیں دیں گے۔ حکومت میں آنے کے بعد برسر روزگار سے ہی روز گار چھین لیا گیا۔

اپنے بیان میں سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ پاکستان اسٹیل مل ایشیا کا سب سے بڑا ادارہ تھا۔ معیشت میں اس کا اہم کردار تھا۔ ظالم درندوں اور کرپٹ حکمرانوں کی وجہ سے آج ادارہ تباہ و برباد ہوگیا۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ ہم نے پاکستان اسٹیل مل سے متعلق سینیٹ میں قرارداد پیش کی۔ سینیٹ میں سوالات اٹھائے جس پر بیوروکریسی اور حکومت جوابات نہ دے سکی۔

ان کا کہنا تھا کہ جماعت اسلامی پاکستان اسٹیل مل کے مزدوروں کے پشت پر موجود ہے۔ اسٹیل مل ملازمین نے اپنی ساری زندگی وقف کردی اور آج حکومت نے انہیں بےروز گار کردیا گیا۔

سراج الحق نے کہا کہ حکومت کو چاہیے تھا کہ اسٹیل مل کی ناکامی کے ذمے داران کے خلاف تحقیقات کرتی۔ موجودہ حکمرانوں نے مظلوم ملازمین کو بےروزگار کیا اور کھلے آسمان تلے چھوڑ دیا۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ گورنر سندھ عمران اسماعیل کہتے ہیں کہ ہم نے ہر مزدور کو 5 لاکھ روپے ادا کیے ہیں۔ ہم کہتے ہیں کہ 50 لاکھ روپے لو اور گورنر ہاؤس چھوڑ دو۔