چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کیخلاف بھی جوڈیشل کونسل میں ریفرنس دائر

320

اسلام آباد(آن لائن)چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس قاسم خان کے خلاف بھی سپریم جوڈیشل کونسل میں ریفرنس دائرکردیا گیا۔ریفرنس ایڈووکیٹ محمد آفاق کی طرف سے دائر کیا گیا جس کی کاپی صدر مملکت کو بھی ارسال کی گئی ہے۔ریفرنس میں چیف جسٹس قاسم خان پر اختیارات کے ناجائز استعمال اور مس کنڈکٹ کے الزامات عائد کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ چیف جسٹس نے عہدے کا غلط استعمال کرتے ہوئے 5 افراد کو اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل پنجاب تعینات کرایا،ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب شان گل کے ذریعے 5وکلا کو پنجاب میں لا افسران تعینات کروایا گیا،شان گل کو خدمات کے بدلے بطور جج لاہور ہائیکورٹ لگانے کی سفارش کی گئی، چیف جسٹس قاسم خان نے عہدے کا غلط استعمال کرکے ایڈووکیٹ عظمت علی خانزادہ کو ڈپٹی اٹارنی جنرل تعینات کروایا،ذاتی مفادات کے بدلے 16 افراد کے نام بطور جج لاہور ہائیکورٹ بھجوائے گئے ہیں، خلاف میریٹ، بدنیتی اور اقربا پروری کے تحت وکلا تنظیموں کے منظور نظر افراد کی جوڈیشل کمیشن کو سفارشکی۔ریفرنس میں استدعا کی گئی ہے کہ مس کنڈکٹ کا مرتکب ہونے پر چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کو فوری عہدے سے ہٹاتے ہوئے چیف جسٹس قاسم خان کے خلاف سپریم جوڈیشل کونسل سے تحقیقات کرائی جائے۔