سعودی عرب آنے والے مسافروں کے لیے نئے ضوابط پرعمل لازمی قرار

207

ریاض: کورونا وائرس کی نئی قسم کے باعث سعودی عرب نے 17 ممالک سے آنے والے مسافروں کے لیے نئے ضابطے مقرر کیے ہیں جبکہ سعودی عرب نے کورونا کی دوسری لہر کے باعث غیر ملکی پروازوں پر عائد پابندیاں ختم کر دیں ہیں۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق نئے ضوابط پر عملدر آمد پروازوں کی بحالی کے ساتھ ہوگیا ہے جبکہ  وزارت صحت کا کہناہےکہ برطانیہ اور جنوبی افریقہ سے آنے والے مسافروں کے لیے خصوصی ضوابط ہیں جن پر عمل کرنا لازمی ہوگا۔

برطانیہ اور جنوبی افریقہ، دونوں ممالک سے آنے والے مسافروں کو سعودی عرب داخل ہونے سے پہلے کسی اور ملک میں 14 دن گزارنے ہوں گے۔

وزارت صحت کے مطابق سعودی عرب پہنچنے پر برطانیہ اور جنوبی افریقہ کے مسافروں کو  14 دن قرنطینہ کرنا ہوگا اور وہ سفر سے پہلے پی سی آر ٹیسٹ کے بھی پابند ہوں گے جبکہ سعودی عرب میں قرنطینہ سے پہلے اور قرنطینہ کی مدت ختم ہونے کے بعد دو مرتبہ اسے پی سی آر ٹیسٹ کرنا ہوگا۔

وزارت صحت کا کہنا ہے کہ آسٹریلیا، سنگاپور، ہالینڈ، کینیڈا، ڈنمارک، آئس لینڈ، جرمنی، ہانگ کانگ، اٹلی، فرانس، سپین، سویڈن، جاپان اور لبنان سے آنے والے غیر ملکی مسافروں کو گھروں میں سات دن کے لیے قرنطینہ کرنا ہوگا جبکہ  مذکورہ ممالک سے آنے والے مسافر پی سی آر سرٹیفکیٹ  اپنے ساتھ لائیں گے جبکہ قرنطینہ کے چھٹے روز دوبارہ پی سی آر ٹیسٹ کرنا ہوگا۔

دوسری جانب وزارت صحت نے کہا ہے کہ مذکورہ بالا دونوں کیٹگری کے علاوہ دنیا کے باقی ممالک  مسافروں کے لیے ضوابط یہ ہیں کہ انہیں سات دن گھروں تک محدود رہنا ہوگا یا پھر تین دن گھر میں رہنے کے بعد پی سی آر ٹیسٹ کرنا ہوگا۔

واضح رہے وزارت صحت نے کہا ہے کہ یہ ضوابط تا ہدایت ثانی قابل عمل رہیں گے۔