امریکی نرس ویکسین لگوا کربھی کورونا کا شکار ہوگئی

275

امریکی ریاست کیلیفورنیا میں نرس نے کورونا مریضوں کو لگائی جانے والی فائزر کی ویکسین لگوائی تاہم نرس ایک ہفتے بعد کورونا وائرس کا شکار ہوگئی۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق کیلیفورنیا کی 45 سالہ نرس میتھیو ڈبلیو امریکا کے دو مختلف مقامی اسپتالوں میں خدمات سر انجام دے رہی ہیں۔خاتون نے 18دسمبر کو ایک فیس بک پوسٹ میں لکھا تھا کہ انہیں کورونا وائرس سے بچاؤ کیلئے فائزر کی ویکسین لگائی گئی ہے۔

 بعد ازاں انہوں نے اے بی سی نیوز سے وابستہ ایک فرد کو بتایا کہ ویکسینیشن کے بعد ان کا بازو سوج گیا تھا تاہم انہیں کوئی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہوا تھا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ کرسمس سے 6روز قبل وہ کورونا یونٹ میں لگاتار کام کرنے سے بیمار ہوگئی تھیں جبکہ انہیں سردی محسوس ہورہی تھی۔

خبر ایجنسی کے مطابق خاتون نرس کا کورونا وائرس کرایا گیا جو کرسمس سے صرف ایک روز قبل مثبت آگیا تھا۔

دوسری جانب ماہرین کے مطابق کورونا وائرس کی ویکسین کی 2 ڈوزز لینا ضروری ہے، پہلی ڈوز کے بعد مرض کے امکانات 50 فیصد تک معدوم ہوجاتے ہیں تاہم دوسری ڈوز کے بعد 95 فیصد تک انسان کورونا وائرس سے محفوظ ہوجاتا ہے۔

یاد رہے کہ دنیا بھر میں مہلک وباکورونا وائرس سے اموات 17 لاکھ 99 ہزار سے تجاوز کرچکی ہیں، امریکا میں سب سے زیادہ 3 لاکھ 46 ہزار افراد لقمۂ اجل بن چکے ہیں۔