اینٹی کرپشن کی کارروائی، رجسٹرار نیو کراچی کے دفتر پر چھاپہ

182

کراچی: اینٹی کرپشن ویسٹ زون کی بڑی کارروائی، سب رجسٹرار نیو کراچی کے آفس پر چھاپہ مار کر تمام ریکارڈ تحویل میں لے لیے جبکہ گزشتہ سالوں کی نسبت 2020 میں اینٹی کرپشن کی کردگی انتہائی تسلی بخش رہی  ہے۔

تفصیلات کے مطابق ڈپٹی ڈائریکٹر اینٹی کرپشن ویسٹ زون جام ظفراللہ دھاریجو  کو درخواست موصول ہوئیں کے سب رجسٹرار نیوکراچی اپنے اختیارات سے تجاوز کرتے ہوئے غیر قانونی طور پر مختلف پلاٹوں کے کاغذات بنائے جارہے ہیں  اور ان کی خرید و فروخت بھی کی جارہی ہے۔

 رپورٹ کے مطابق درخواست موصول ہونے پر فوری ایکشن لیتے ہوئے ڈپٹی ڈائریکٹر اینٹی کرپشن ویسٹ جام ظفر دھاریجو نے اسسٹنٹ ڈائریکٹر نوردین ھنگورجو  کی سربراہی میں ایک ٹیم تشکیل دی جس نے سب رجسٹرار نیو کراچی کے آفس پر سرپرائز وزٹ کیا اور مطلوبہ تمام ریکارڈ اپنی تحویل میں لے کر مزید کاروائی شروع کر دی گئی ہے۔

ڈپٹی ڈائریکٹر اینٹی کرپشن ویسٹ جام ظفراللہ دھاریجو کا کہنا تھا کہ کرپشن کو جڑ سے اکھاڑنے ہماری اولین ترجیح ہے اور کرپشن کے خاتمے کے بغیر پاکستان ترقی نہیں کر سکتا۔

دوسری جانب ڈائریکٹر اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ سندھ سہیل  قریشی نے  ویسٹ زون کی اس کارروائی کو سرہاتے ہوئے کہاکہ گزشتہ سالوں کی نسبت 2020 میں اینٹی کرپشن کی  کردگی انتہائی تسلی بخش رہی ہے جس میں درجن ایف آئی آر اور خفیہ چھاپے مارے گئے۔

چیئرمین اینٹی کرپشن اقبال میمن اور منسٹر اینٹی کرپشن جام اکرام اللہ دھاریجو نے اپنے دو مختلف بیانات میں کہا کہ صوبہ سندھ  کو کرپشن سے پاک کرنے کے لیے ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے بہت جلد صوبہ سندھ میں سے کرپشن کو ختم کرکے پاکستان کا پہلا کرپشن فری صوبہ بنائیں گے۔

واضح رہے جام اکرام اللہ دھاریجو نے مزید کہا کہ کرپشن کے خاتمے کے لیے سندھ کی عوام کو آگے آنا ہوگا اور کرپشن کو جڑ سے اکھاڑنا ہوگا۔