بھارت میں کورونا بےقابو، مریضوں کی تعداد 1 کروڑ سے تجاوز کرگئی

225

نئی دہلی: بھارت میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد ایک کروڑ سے تجاوز کرگئی ہے جبکہ نئے کیسز گذشتہ تین ماہ کے دوران سب سے کم شرح پر آگئے ہیں۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا کے 25 ہزار 152 نئے کیسز سامنے آئے ہیں جبکہ اس سے قبل ستمبر کے دوران یہ تعداد ایک لاکھ تک پہنچ گئی تھی۔

بھارت میں کورونا کیسز کی تعداد اس کی مجموعی آبادی 1 ارب 30 کروڑ کا ایک فیصد بنتی ہے جوامریکہ کے بعد وائرس سے متاثرہ افراد کی دوسری بڑی تعداد بنتی ہے۔

بھارتی وزارت صحت کی جانب سے بتایا گیا ہےکہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا وائرس سے مزید 347 افراد ہلاک ہوگئے ہیں اور اس طرح بھارت میں وبا سے ہلاکتوں کی تعداد ایک لاکھ 45 ہزار 136 ہوگئی ہے جبکہ بھارت کا شمار ویکسین بنانے والے بڑے ممالک میں ہوتا ہے اور اس وقت ملک میں پانچ کمپنیاں ویکسین کے مختلف ٹرائلز کر رہی ہیں۔

بھارت کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ممالک میں امریکہ کے بعد دنیا میں دوسرے نمبر پر ہے جبکہ امریکہ کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کے مطابق بھارت میں کورونا وائرس کے کیسز کی مجموعی تعداد 1 کروڑ 4 ہزار سے زائد ہو گئی ہے۔

واضح رہے بھارت آئندہ برس جولائی تک 25 کروڑ افراد کو کورونا ویکیسن فراہم کرنے کا ارادہ رکھتا ہے جبکہ حکومت کورونا ویکیسن کی 45 سے 50 کروڑ خوارکیں حاصل کرنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔

وزارت صحت کا کہنا تھا کہ پہلے مرحلے میں ڈاکٹروں اور طبی کارکنوں کو ویکسین فراہم کی جائے گی جبکہ دوسرے مرحلے میں 50 سال سے زائد عمر کے افراد یا 50 برس سے کم عمر ایسے افراد کو ویکیسن مہیا کی جائے گی جنہیں دیگر مختلف بیماریاں بھی لاحق ہوں۔

رپورٹس کے مطابق بھارت آٹھ اقسام کی ویکسینز بنانے کا ارادہ رکھتا ہے جن میں برطانوی کمپنی ایسٹرا زینیکا کی کووی شیلڈ نامی ویکسین بھی شامل ہے اور  اس ویکسین کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ یہ صرف بھارت کے لیے ہی نہیں بلکہ دنیا کے تمام ممالک اس سے مستفید ہو سکیں گے۔

دوسری جانب دنیا بھر میں فروخت ہونے والی ویکسین کی 60 فیصد سے بھی زیادہ مقدار بھارت میں تیار ہوتی ہے اور بھارت کی 40 ارب ڈالر کی فارماسوٹیکل انڈسٹری فائزر اور موڈرنا کی تیار کردہ کورونا ویکسین کی پیداوار میں شامل نہیں ہے جبکہ انڈین حکام کا کہنا ہے کہ آنے والے دنوں میں دنیا کو کورونا وائرس سے محفوظ بنانے میں انڈیا اہم کردار ادا کرے گا۔