ہوائی فائرنگ کرنے پر اقدام قتل کا مقدمہ درج کیا جائےگا، کراچی پولیس چیف

153

کراچی: پولیس چیف غلام نبی میمن کا کہنا تھا کہ کرسمس اور نیو ایئر نائٹ پر ہوائی فائرنگ کرنے والوں کے خلاف اقدام قتل کا مقدمہ درج کیا جائے گا جبکہ شہر بھر  میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی پولیس آفس میں نئے سال،  کرسمس اور بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کے یوم پیدائش پر مزار قائد اور شہر میں سیکیورٹی کے حوالے سے اجلاس ہوا، اجلاس میں اعلیٰ پولیس افسران نے شرکت کی جبکہ اجلاس میں 25 دسمبر کو شہر بھر اور خصوصی طور پر مزار قائد پر سیکیورٹی کے انتظامات کے حوالے سے تفصیلی گفتگو کی گئی۔

اجلاس میں بتایا گیا کہ ہوائی فائرنگ جرم ہے اور اس جرم کے مرتکب افراد کے خلاف اقدام قتل سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمات کا اندراج کیا جائے گاجس کے تحت 10 سال قید اور جرمانے کی سزا ہو سکتی ہے جبکہ یہ جرم ناقابل ضمانت بھی ہے، کرسمس اور نیو ایئر نائٹ پر ہوائی فائرنگ میں ملوث افراد کے خلاف بلا امتیاز سخت قانونی کارروائی کی جائے گی۔

مزار قائد اور اطراف کے علاقوں میں 40 تربیت یافتہ پولیس اہلکاروں پر مشتمل موٹرسائیکل اسکواڈ مستقل بنیادوں پر24گھنٹے گشت پر مامور ہے، بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کے یوم پیدائش کی مناسبت سے مزار پر گارڈز کی تبدیلی اور دیگر تقریبات کی سیکیورٹی کیلیے پولیس کی بھاری نفری تعینات کی جا رہی ہے جبکہ مزار قائد کے اطراف بلند عمارتوں پر اسپیشل سیکیورٹی یونٹ کے تربیت یافتہ اسنائپرز تعینات کیے جائیں گے۔

دوسری جانب  اسپیشل سیکیورٹی یونٹ کی اسپیشل ویپن اینڈ ٹیکٹکس ٹیمیں بھی کسی ناخوشگوار واقعے سے فوری نمٹنے کے لیے موجود رہیں گی جبکہ مزار قائد کے اطراف عوام کوکسی بھی پریشانی سے بچانے اور ٹریفک کو رواں دواں رکھنے کیلئے ٹریفک پولیس کی بھاری نفری موجود رہے گی۔

واضح رہے کراچی پولیس چیف غلام نبی میمن کا کہنا تھا کہ کرسمس اور نیو ایئر نائٹ پر ہوائی فائرنگ کرنے والوں کے خلاف اقدام قتل کا مقدمہ درج کیا جائے گا کیونکہ ہوائی فائرنگ ایک جرم ہے اور اس جرم کے مرتکب افراد کے خلاف اقدام قتل سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمات کا اندراج کیا جائے گا۔