کراچی : ایٹمی بجلی گھر کینپ ٹو کی تکمیل آخری مراحل میں داخل

77

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی کے ساحل ہاکس بے پر زیر تعمیر دوسرا ایٹمی بجلی گھر کینپ ٹو تکمیل کے آخری مراحل میں داخل ہوگیا ہے۔ کینپ ٹو کے پلانٹ میں فیول لوڈنگ کا عمل شروع ہو گیا ہے۔ پلانٹ سے بجلی کی باقاعدہ پیداوار آئندہ سال اپریل سے شروع ہو گی۔ پاکستان اٹامک انرجی کمیشن کے ترجمان کے مطابق بجلی گھر میں ایٹمی مواد ڈالنے کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل ندیم، چیئرمین ایٹمی توانائی کمیشن محمد نعیم، ممبر پاور ایٹمی توانائی کمیشن اور چین کے اعلیٰ عہدے دار موجود تھے۔ ایٹمی بجلی گھر کینپ ٹو، پریشرائزڈ واٹر ریکٹر ہے جس کی تعمیر اگست 2015ء میں شروع ہوئی۔ اپریل2021ء میں یہ بجلی گھر باقاعدہ پیداوار شروع کردے گا۔ اس طرز کا ایک اور پلانٹ کینپ تھری بھی 2021ء کے آخر تک اپنی پیداوار شروع کر دے گا۔