نیوزی لینڈ: پاکستان کرکٹ ٹیم کے ایک اور رکن کا کورونا ٹیسٹ مثبت آگیا

162

نیوزی لینڈ پہنچنے کے بعد قومی ٹیم مستقل مسائل سے دوچار ہے اور اب پاکستان کرکٹ ٹیم کے ایک اور رکن کا کورونا کا ٹیسٹ مثبت آ گیا ہے جبکہ پاکستان اسکواڈ کی چوتھی کووڈ 19 ٹیسٹنگ کل ہو گی۔

تفصیلات کے مطابق وزارت صحت نیوزی لینڈ نے اس بات کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہےکہ کورونا کا شکار ہونے والے اس رکن کا تعلق ان 3 کیسز سے ہے جن کے بارے میں کہا گیا تھا کہ ان کے کیسز کا جائزہ لیا جا رہا ہے جبکہ پاکستان اسکواڈ کو ابھی ٹریننگ کی اجازت نہیں ہے اور موجودہ حالات کو دیکھ کر میڈیکل آفیسر صورتحال کا جائزہ لینےکےبعد ٹریننگ کی اجازت دی جائےگی۔

خیال رہے اگر چوتھی ٹیسٹنگ میں بھی جن افراد کے رزلٹ منفی آئیں گے تو انہیں اس روز سے ٹریننگ کی اجازت مل جائے گی۔

دوسری جانب پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے نیوزی لینڈ میں اب تک قومی اسکواڈ کی 3 مرتبہ کووڈ 19 ٹیسٹنگ ہوچکی ہے، 54 میں سے 8 ارکان میں کووڈ 19 کی تشخیض ہوچکی جن میں 8 میں سے 2 ارکان کو ہسٹارک کیسز یعنی نان انفیکشیس قرار دیا گیا ہے جبکہ پاکستان اسکواڈ کی چوتھی کووڈ 19 ٹیسٹنگ کل ہو گی۔

واضح رہے قومی ٹیم کو ٹریننگ کی اجازت نیوزی لینڈ کی وزارت صحت کی منظوری سے مشروط ہے، 14 روزہ آئسولیشن میں قومی اسکواڈ کی آخری ٹیسٹنگ 12 ویں روز ہوگی، اس ٹیسٹ میں منفی اور 14 ویں روز ہیلتھ چیک اپ کلیئر کرنے والے ارکان کو مینجڈ آئسولیشن چھوڑنےکی اجازت ہوگی۔

پی سی بی کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ نہ صرف نیوزی لینڈ میں موجود قومی کرکٹ ٹیم کی مینجمنٹ سے مسلسل رابطے میں ہے بلکہ وہ انہیں ٹریننگ میں واپسی سے متعلق ہر اپ ڈیٹ سے بھی آگاہ کررہا ہے جبکہ ٹیم مینجمنٹ اور تمام کھلاڑی اس عمل کو مکمل سپورٹ کررہے ہیں اور وہ حکومت نیوزی لینڈ کے مقررہ قوانین کے تحت جلد از جلد ٹریننگ کا آغاز کرنے کے منتظر ہیں۔

یاد رہے نیوزی لینڈ پہنچنے کے بعد سے اب تک پاکستانی ٹیم کے کُل 8 اراکین کے کورونا کے ٹیسٹ مثبت آ چکے ہیں۔