وزیر اعظم کی زیر صدارت کراچی ٹرانسفارمیشن پلان پراجلاس، آرمی چیف کی شرکت

181

اسلام آباد:وزیر اعظم عمران خان کراچی ٹرانسفارمیشن پلان کے تحت 100 سے زائد منصوبوں کی بروقت تکمیل پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی کے مسائل کی مستقل بنیادوں پر حل انتہائی ضروری ہے، ہر سال مون سون کے دوران کراچی میں برساتی پانی سے ہونے والے نقصانات کا سبب نالوں پر غیر قانونی تعمیرات ہیں۔

وزیر اعظم عمران خان کی صدارت میں کراچی ٹرانسفارمیشن پلان  کے حوالے سے اعلی سطح  کااجلاس ہوا،جس  میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ،وفاقی وزراء شیخ رشید احمد، اسد عمر،فیصل واوڈا ،مشیرِ خزانہ ڈاکٹر عبدلحفیظ شیخ نے  شرکت   کی ۔

اجلاس کوبریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ کراچی ٹرانسفرمیشن پلان کے تحت 100 سے زائد منصوبوں کی منصوبہ بندی کی جاچکی ہیں جو 1.117 ٹریلین روپے کی لاگت سے مکمل ہونگے، ان منصوبوں کو تکمیلی مراحل کے اعتبار سے تین حصوں میں تقسیم کیا گیاہے،اجلاس کو ان منصوبوں پر اب تک ہونے والے پیش رفت سے آگاہ کیا گیا ۔

وزیر اعظم نے منصوبوں کی بروقت تکمیل پر زور دیتے ہوئے کہا کہ کراچی کے مسائل کی مستقل بنیادوں پر حل انتہائی ضروری ہے، ہر سال مون سون کے دوران کراچی میں برساتی پانی سے ہونے والے نقصانات کا سبب نالوں پر غیرقانونی تعمیرات ہیں۔

وزیر اعظم نے واضح ہدایت دی کہ کراچی میں تجاوزات ہٹانے سے پہلے وہاں کے مستحق مکینوں کیلئے پیشگی متبادل انتظامات کو یقینی بنایا جائے، وزیر اعظم نے کراچی کو پانی فراہم کرنے کے کے فور منصوبے  کی استعداد اور افادیت بڑھانے کے حوالے سے سفارشات مرتب کرنے کیلئے وزارتِ منصوبہ بندی کے تحت تکنیکی کمیٹی بنانے کی بھی ہدایت کی۔