آٹھ ماہ سے تنخواہیں بند ہونے سے فاقہ کشی کا شکار ہیں، منور شاہ

39

حیدر آباد (اسٹاف رپورٹر) آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن (ایپکا) کے صوبائی صدر سید منور علی شاہ، انفارمیشن سیکرٹری شاہد سومرو، آفس سیکرٹری سرفراز علی راجپوت سے گزشتہ روز عوامی سہولت مرکز کی مختلف برانچوں کے کچے ملازمین شفیع محمد چانڈیو، میر عابد، شہباز پٹھان، مجیب میمن سے بورڈ آف ریونیو سیکرٹریٹ حیدر آباد کے باہر ملاقات کرتے ہوئے بتایا کہ گزشتہ نو سال سے عوامی سہولت مرکز کے اندر اپنے فرائض سرانجام دے رہے ہیں لیکن ہمیں مستقل نہیں کیا جارہا اور اب آٹھ ماہ سے تنخواہیں بھی بند کردی گئی ہیں جس کی وجہ سے گھروں میں فاقہ کشی کا ماحول ہے، ایک وقت کی روٹی کھانے کے لیے ترس رہے ہیں۔ تنخواہیں بند کرنے سے اس وقت کافی پریشانی میں مبتلا ہیں۔ ایپکا رہنمائوں نے سینئر بورڈ آف ریونیو حیدر آباد سے مطالبہ کیا ہے کہ عوامی سہولت مرکز کے 204 کچے ملازمین جو مختلف کیٹگریز کے ملازم ہیں، ان کو فوری طور پر مستقل کرتے ہوئے آٹھ ماہ سے غریب ملازمین کو تنخواہیں فوری طور پر جاری کی جائیں بصورت دیگر ایپکا سخت احتجاج کرنے پر مجبور ہوجائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بورڈ آف ریونیو حیدر آباد کے آٹو مشین سیکشن کے سیکڑوں کچے ملازمین بھی آٹھ ماہ سے فاقہ کشی کا شکار ہیں۔