سکھر، موسم سرما کی آمد ، بجلی کی لوڈشیڈنگ میں اٖضافے کیخلاف احتجاج

31

 

سکھر (نمائندہ جسارت) موسم سرما کی آمد سے قبل ہی شہر کے بیشتر علاقوں میں سوئی گیس کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ جاری، سماجی تنظیموں کی جانب سے خالی برتن بجا کر انوکھا احتجاجی مظاہرہ، نعرے بازی، حکام بالا سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔ سوئی گیس کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ اور پریشر میں کمی کیخلاف شہریوں کی بڑی تعداد نے سکھر کی سول سوسائٹی کے زیر اہتمام واری تڑ روڈ پر ہاتھوں میں خالی برتن بجا، چولہے، سبزیاں اٹھا کر سوئی گیس انتظامیہ کیخلاف نعرے بازی کرتے ہوئے انوکھا احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرے میں شامل سول سوسائٹی کے نمائندگان نصیر گوپانگ، وقار علی سومرو، نعیم بلوچ، آصف راجپوت و دیگر کا کہنا تھا کہ ملک کے دیگر علاقوں کی طرح سکھر میں بھی موسم سرما کی آمد سے قبل ہی سوئی سدرن گیس کمپنی سکھر ریجن نے اپنا رنگ دکھانا شروع کردیا ہے۔ موسم سرما کی آمد سے قبل ہی شہر کے مختلف علاقوں واری تڑ روڈ، شمس آباد، بیراج روڈ، نیو پنڈ، مائیکرو کالونی، پرانا سکھر، جیلانی روڈ، ٹکر محلہ، پیر مراد شاہ کالونی، انجن شیڈ کالونی، فریئر روڈ سکھر، بندر روڈ، ملٹری روڈ، نواں گوٹھ، پرانا سکھر و دیگر رہائشی علاقوں میں سوئی گیس کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ سمیت گیس پریشر کمی کر کے شہریوں کو دوہرے عذاب میں مبتلا کیا جارہا ہے۔ عوامی شکایات کے باوجود سوئی سدرن گیس کمپنی سکھر ریجن کے افسران و عملے کے کانوں میں جوں تک نہیں رینگ رہی ہے۔ گیس کی لوڈشیڈنگ اور گیس پریشر میں کمی کے باعث جہاں کاروباری زندگی شدید متاثر ہے، وہیں گھریلو امور خانہ داری کے سلسلے میں خواتین کو بھی مشکلات پیش آرہی ہیں۔ مظاہرین نے حکام بالا سے نوٹس لے کر شہریوں کو گیس کے حوالے سے درپیش مشکلات سے نجات دلانے کا پُرزور مطالبہ کیا ہے۔