جسٹس فائز عیسیٰ کیس کے فیصلے نے حکومتی چہرہ بے نقاب کردیا، لیاقت بلوچ

63

لاہور (نمائندہ جسارت)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان اور مجلس قائمہ سیاسی امور کے صدر لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ عمران خان خود اپنی حکومت سے مایوس ہوچکے ہیں‘ نااہل حکومتی ٹیم سے کوئی تبدیلی نہیں لاسکتے‘ عمران خان کی حکومت کٹھ پتلی حکومت ہے‘ عمران خان وزیر اعظم ہائوس میں ایک بے بس قیدی بن چکے ہیں‘ ان کو لانے والے ملک کا بیڑا غرق کرنے کے ذمے دار ہیں‘ عمران خان پریشان ہیں کہ موجودہ حالت میں کیا کریں‘ جسٹس فائز عیسیٰ کیس میں عدالت عظمیٰ کے فیصلے نے حکومت کا چہرہ بے نقاب کردیا‘ فیٹف کی مرضی کے مطابق مدارس کے خلاف قانون سازی کی گئی لیکن انہوں نے پھر بھی اس پر اکتفا نہیں کیا اور ڈو مور کا مطالبہ کیا۔ وہ جماعت اسلامی مردان کے اجتماع ارکان سے خطاب کر رہے تھے۔ اجتماع سے ڈپٹی سیکرٹری جنرل حافظ ساجد انور، سید بختیار معانی اور امیر ضلع مولانا سلطان محمد نے بھی خطاب کیا۔ لیاقت بلوچ نے کہا کہ اپوزیشن کے جلسے نے اسٹیبلشمنٹ کے کردار کو داغدار کیا‘ نااہل اور ناکام حکمران کی وجہ سے قومی اداروں کے خلاف نفرتیں بڑھ رہی ہیں‘ تمام ریاستی ادارے غیر جانبدارانہ کردار ادا کریں‘ عام آدمی کے مسائل حل کرنے کے لیے حکومت کو پوری سنجیدگی سے فیصلہ کرنے کی ضرورت ہے‘ حکومت جمہوری روایات کی پاسداری کرکے عوامی مسائل حل کرے‘ جماعت اسلامی اپنے مشن کے مطابق انتخابی اور سیاسی عمل میں حصہ لے رہی ہے اور رابطہ عوام مہم چلا رہی ہے‘ انتخابات میں حصہ اپنے نام، جھنڈے اور نشان پر لیں گے‘ جماعت اسلامی کے ارکان تنظیم میں ریڑھ کی ہڈی کہ حیثیت رکھتے ہیں‘ خیبر تا کراچی عوامی مسائل کو حل کرنے کے لیے جماعت اسلامی ہر محاذ پر حقیقی اپوزیشن کا کردار ادا کرتی رہے گی۔