یقین دلاتا ہوں 15جنوری تک نواز شریف پاکستانی جیل میں ہونگے، شبلی فراز

72

اسلام آباد ( آن لائن )وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے دعویٰ کیا ہے کہ حکومت نواز شریف کو 15 جنوری تک پاکستان واپس لے آئے گی،حکومت نواز شریف کو واپس لانے کے لیے پوری طرح متحرک ہے، جو پیسے یہ لوٹ کر گئے ہیں نہ صرف اس کی سزا دلوائیں گے بلکہ وہ پیسے بھی واپس لے کر آئیں گے۔اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ میں یقین دلاتا ہوں کہ15جنوری تک نواز شریف پاکستان میں کسی ایک جیل میں ہوں گے۔نواز شریف کی واپسی کے حوالے سے ہونے والی پیش رفت کے حوالے سے سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ برطانوی حکومت سے کوئی معاہدہ نہیں تاہم سفارتی و قانونی ذریعے سے برطانوی حکومت سے رابطے میں ہیں اور 15 جنوری تک وہ یہاں آجائیں گے۔مسلم لیگ (ن) کے رہنما کیپٹن (ر) صفدر کی کراچی کے ایک ہوٹل سے گرفتاری کی گزشتہ روز سامنے آنے والی ویڈیو کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ سی سی ٹی وی فوٹیج میں مریم صفدر کی باڈی لینگویج میں ایسا کچھ نظر نہیں آیا کہ جس سے وہ پریشان ہوں، اگر کوئی اور ویڈیو ہے تو وہ بھی ہم سے شیئر کریں۔ان کا کہنا تھا کہ مریم نواز نے متضاد باتیں کیں، اور کل بھی ان کے درباریوں نے چادر اور چار دیواری کا کئی مرتبہ ذکر کیا، شاید یہ بھول گئے ہیں کہ انہوں نے اپنے دور حکومت میں کس طرح سے ماڈل ٹائون کی خواتین پر فائرنگ کی اور ان کو مارا تھا۔انہوں نے کہا کہ فیصل آباد اور ملک کے دیگر حصوں میں ان کا طریقہ کار سب جانتے ہیں، بینظیر بھٹو کی تصاویر ہیلی کاپٹر سے گرائیں، ان کی کردار کشی کے لیے کیا کیا نہیں کیا، اس وقت چادر اور چار دیواری کا انہیں خیال نہیں آیا تھا۔ان کا کہنا تھا کہ ان کے درباری روز ٹی وی پر آکر جھوٹ بولتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ مریم نواز اور سندھ حکومت کے متضاد بیانات سے مجھے لگتا ہے کہ بلاول زرداری نے ان سے اپنی والدہ کا بدلہ لے لیا ہے۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ ایک طرف مریم نواز کہتی ہیں کہ نواز شریف اس ملک کا سیاسی لیڈر ہے اور دوسری جانب شہباز شریف کو تاثر دیتی ہیں کہ وہ پارٹی کی لیڈر شپ میں شامل ہوچکی ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ مریم صفدر وہ ہی ہیں جنہوں نے بڑی محنت سے کیلیبری فانٹ کوئین کا خطاب اپنے لیے حاصل کیا، انہیں اور انہیں اور ان کے والد کو سپریم کورٹ نے جھوٹا قرار دیا۔انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کے کئی محرکات ہوسکتے ہیں، یہ اپنی سیاست کھیل رہے ہیں۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ ان کے اندرونی سیاسی تضادات سامنے آرہے ہیں، انہوں نے اپنا لیڈر فضل الرحمن کو بنایا جو مذہب کو اوڑھ کر سیاست کرتے ہیں۔ یہ آپس میں جو ایک دوسرے کے ساتھ کھیل رہے ہیں اس سے ہمارا کوئی لینا دینا نہیں۔