“کٹھ پتلی حکومت سے گلگت بلتستان کو بچانا ہے”

122

گلگت بلتستان: پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کہا کہ میں بھٹو کا نواسہ اور بے نظیربھٹو کا بیٹا ہوں میں کوئی کھلاڑی نہیں کہ یو ٹرن لے لوں.

پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے گلگت بلتستان کے ضلع گانچھے میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کٹھ پتلی اورسلیکٹڈ حکومت سے نظام چھین کر رہیں گے، بھٹو کا نواسہ اور بے نظیربھٹو کا بیٹا ہوں میں کوئی کھلاڑی نہیں کہ یو ٹرن لے لوں.

بلاول بھٹو زرداری نےکہا کہ ہم سلیکٹڈ حکومت کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں، ہمیں گلگت بلتستان کو سلیکٹڈ اور کٹھ پتلی راج سے بچانا ہے، کٹھ پتلی حکومت نے پنجاب کا کیا حال کردیا ہے، عوام کو ان ظالم حکمرانوں سے بچانا ہوگا۔

گلگت بلتستان ہمارا دوسرا گھر ہے، پیپلزپارٹی اور گلگت بلتستان کےعوام کے درمیان تاریخی رشتہ ہے، یہاں کےعوام کیوں بے روزگار ہیں؟ صحت کے ادارے کیوں نہیں بنتے؟ میں یہاں کے مسائل پارلیمان میں اٹھاؤں گا، شہید بھٹو اور شہید رانی کاوعدہ مجھے پوراکرنا ہے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے پورے ملک میں مہنگائی کا طوفان کھڑا کردیا، آج ملک میں ہر طبقہ سراپا احتجاج ہے، سرکاری ملازمین تنخواہوں سے محروم ہیں، بزرگوں کو پنشن نہیں مل رہی، پیپلز پارٹی کے دور میں ہم نے پنشن میں 150 فیصد اضافہ کیا۔

تقریر کے آخر میں بلاول نے حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ نالائق حکمرانوں کے گھر جانے کا وقت قریب ہے، آئندہ حکومت پیپلز پارٹی کی ہوگی ۔