بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی جاری، مزید 4کشمیری شہید

109

سری نگر(مانیٹر نگ ڈیسک)مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جارحیت میں مزید 5 کشمیری نوجوان شہید ہوگئے جس کے بعد 8 روز میں شہید ہونے والوں کی تعداد 13 ہوگئی۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق قابض بھارتی فوج نے جنت نظیر وادی کے اضلاع شوپیاں اور پلواما میں سرچ آپریشن کے دوران گھر گھر تلاشی لی اور اس دوران ایک گھر پر اندھا دھند فائرنگ کرکے 5 نوجوانوں کو شہید کردیا۔ اس طرح سری نگر، شوپیاں، بڈگام، اور اننت ناگ میں کیے گئے آپریشن میں 13 کشمیری نوجوانوں کو شہید کیا جاچکا ہے جب کہ انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی کرتے ہوئے بھارت نواز کٹھ پتلی انتظامیہ نے نوجوانوں کی شہادت کو مقابلہ ظاہر کرنے کی کوشش کی اور لاشیں لواحقین کے حوالے کرنے سے انکار کردیا۔جس پر علاقہ مکینوں نے شہداء کے اہل خانہ کے ساتھ بھارتی جارحیت کے خلاف احتجاجی مظاہر کیا اور آزادی جدوجہد کشمیر کے حق میں نعرے لگائے۔ مظاہرین کو طاقت کے بل پر کچلنے کے لیے قابض بھارتی فوج نے آنسو گیس کی شیلنگ اور ہوائی فائرنگ کرکے 10 مظاہرین کو زخمی کردیا۔دریں اثناء شوپیاں اور سری نگر میں سینٹرل ریزرو پولیس فورس کی گاڑی پر 2 الگ واقعات میں ہیڈگرنیڈ سے حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں مجموعی طور پر 3 اہلکار زخمی ہوگئے جن میں سے ایک کی حالت نازک ہے۔