قلت ختم کرنے کیلیے 1.7 ملین ٹن گندم درآمد کرینگے، فخر امام

29

اسلام آباد (اے پی پی) وفاقی وزیر برائے قومی غذائی تحفظ اور تحقیق سید فخر امام نے کہا ہے کہ حکومت نے ملک میں گندم کی قلت دور کرنے کیلیے 1.7 ملین ٹن گندم درآمد کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو جنوری 2021ء تک پاکستان پہنچ جائے گی اور اس سے گندم کی دستیابی کی صورتحال میں نمایاں بہتری آئے گی، وزیراعظم عمران خان نے فصلوں کو ٹڈی دل کے حملوں سے محفوظ رکھنے کیلیے 26 ارب روپے کے پیکیج کی بھی منظوری دی ہے اس رقم سے زرعی شعبے کے ڈھانچے کو ان حملوں کا مقابلہ کرنے کا اہل بنایا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے خوراک کے عالمی دن کے موقع پر پالیسی ادارہ برائے پائیدار ترقی (ایس ڈی پی آئی) کے تحت ’بہتر تعمیر نو‘ کے زیر عنوان تقریب کے دوران خصوصی گفتگو میں کیا۔ سید فخر امام نے کہا کہ کورونا وبا کے پیش نظر کسانوں کو 50 ملین روپے کا پیکیج دیا گیا ہے جس سے انہیں بیجوں اور کھاد کی خریداری میں مدد ملے گی۔ حکومت ماحولیاتی تبدیلیوں کی مطابقت کو سامنے رکھتے ہوئے کسانوں کو مفید فصلوں کی کاشت سے متعلق تحقیقی معاونت بھی فراہم کر رہی ہے۔